فیصلہ کرنا ہے دہشتگردی نے ہمیں ختم کرنا ہے یا ہم نے دہشت گردی کو : گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان

فیصلہ کرنا ہے دہشتگردی نے ہمیں ختم کرنا ہے یا ہم نے دہشت گردی کو : گورنر سندھ ...
فیصلہ کرنا ہے دہشتگردی نے ہمیں ختم کرنا ہے یا ہم نے دہشت گردی کو : گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان نے کہا ہے کہ ہم نے فیصلہ کرنا ہے کہ دہشت گردی نے ہمیں ختم کرنا ہے یا ہم نے دہشت گردی کو ختم کرنا ہے، نیشنل ایکشن پلان کے ذریعے کی جانے والی کارروائیوں میں کسی مخصوص جماعت یا مخصوص شخصیت کو نشانہ نہیں بنایا جا رہا ہے، بلدیاتی اختیارات کا معاملہ سیاسی ہے اور یہ سیاسی طریقے سے ہی حل ہونا چاہئے۔ مقامی ہوٹل میں نیب اورٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کے زیر اہتمام  زیرو کرپشن 100 فیصد ڈویلپمنٹ،، کے عنوان سےمنعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر عشرت العباد نے کہا کہ ہم مشکل دور سے گزر رہے ہیں دہشت گردی کے خلاف جاری ہے اور ہم نے اس میں اچھے اور برے دہشت گردی کی نشاندہی نہیں کرنی سب کے ساتھ ایک جیسا سلوک رکھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں یقین دلاتا ہوں کہ مذکورہ آپریشن میں کوئی غلطی نہیں ہوئی ہے ہمیں فیصلہ کرنا ہے کہ دہشت گردی نے ہمیں ختم کرنا ہے کہ ہم نے دہشت گردی کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خلاف کارروائی شروع ہونے کے بعد مختلف سرکاری اداروں میں افسران نے کام روک دیا جن کی تعداد محدود ہے اور وہ منظم نہیں۔ گورنر سندھ نے کہا کہ کرپٹ افسران کی فہرست تیار ہونے کے بعد ان کے خلاف انکوائریاں شروع کی جاتی ہیں اگر کوئی ملوث ہوتا ہے تو اس کے خلاف کارروائی ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قانون نافذ کرنے ولاے اداروں اور عوام نے بڑی قربانیاں دی ہیں اس کارروائیوں کے نتیجے میں کراچی کے شہری سکھ کا سانس لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پورے ملک میں بلدیاتی انتخابات ہوئے ہیں اب سیاسی جماعتوں کا کام ہے کہ وہ اپنے کام سے لوگوں کو متاثر کریں۔

مزید : کراچی