نیب کو ہمیشہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا، یکساں احتساب ہو تو پیپلزپارٹی حکومت کے ساتھ ہے:فرحت اللہ بابر

نیب کو ہمیشہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا، یکساں احتساب ہو تو ...
 نیب کو ہمیشہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا، یکساں احتساب ہو تو پیپلزپارٹی حکومت کے ساتھ ہے:فرحت اللہ بابر

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما  فرحت اللہ بابر نے کہا کہ نیب کو ہمیشہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا، سیاسی اختلافات ایک جانب مگر جس احتساب سے عوام اور ملک کا فائدہ ہو اس میں پی پی پی حکومت کے ساتھ کھڑی ہے، بظاہر وزیراعظم عمران خان کی نیت پر شک نہیں ہے مگر گورننس کی قابلیت ہونے اور نیت میں بہت فرق ہے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فرحت اللہ بابر کا کہنا تھا کہ بلاشبہ آرڈیننس قانون سازی کی ایک شکل ہے لیکن صحافیوں سے گفتگو کے دوران عمران خان کا یہ بات کہنا خطرناک ہے کہ اگر اپوزیشن جماعتوں کی حمایت نہیں ہے تو حکومت قانون سازی کے لیے آرڈیننس کی جانب جائے گی۔انہوں نے  حکومتی جماعت پر تنقید کرتے ہوئےکہا کہ جنوبی پنجاب صوبہ محاذ کے حوالے سے پی ٹی آئی نے عملی طور پر ایک قدم آگے نہیں بڑھایا،محض دعووں سے گورننس نہیں ہوتی، پی ٹی آئی نے ایجنڈا تو بنا لیا لیکن کوئی عملی پالیسیوں کی سمت واضح نہیں کی۔فرحت اللہ بابر کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کی قیادت اور رہنماؤں پر مقدمات بنانے کا مقصد یہ ہے کہ  پارٹی پر دباؤ ڈالا جائے  تاکہ یہ جماعت سیاسی کارروائیاں جاری نہ رکھ سکے اور ملک میں اپنا مثبت تاثر کھو دے، فرد واحد اختیارات کا استعمال نہ کرے، نیب چیئرمین بطور تین یا زیادہ ممبران کے ایک کمیٹی کی شکل میں فیصلے کرے تو شاید احتساب شفاف ہو سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ نیب کو ہمیشہ سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا ہے، ہماری بدقسمتی ہے کہ 1973 سے اب تک پاکستان میں کسی حکومت نے احتساب کو اتنا سنجیدگی سے نہیں لیا جیسے لینا چاہیے تھا، نیب انتقامی کارروائیوں کا ایک ادارہ ہے، نیب  حکومتی جماعت کی ایما پر مقدمات بنا رہا ہے،پی پی پی نے ہمیشہ اس بات کی حمایت کی ہے کہ سرکار سے تنخوا لینے والے ہر انسان کا یکساں احتساب ہونا چاہیے،سیاسی اختلافات ایک جانب مگر جس احتساب سے عوام اور ملک کا فائدہ ہو اس میں پی پی پی حکومت کے ساتھ کھڑی ہے۔

مزید : قومی