شجاع آباد‘ بھٹوں کی بندش پر بے حال مزدوروں کا انتظامیہ کیخلاف احتجاج

شجاع آباد‘ بھٹوں کی بندش پر بے حال مزدوروں کا انتظامیہ کیخلاف احتجاج

  



شجاع آباد(نامہ نگار) شجاع آباد میں بھَٹوں کی بندش کی وجہ سے ہونے والے مزدوروں کے معاشی قتل کے خلاف بھَٹہ مزدور اور ایسوسی ایشن نے احتجاج کیا۔تفصیلات کے مطابق شجاع آباد میں حکومت کی طرف سے بھَٹوں کی بندش کی وجہ سے ہونے والے مزدوروں کے معاشی قتل کے خلاف بھَٹہ(بقیہ نمبر59صفحہ7پر)

مزدوروں نے احتجاج کیا۔ مزدوروں کے اس احتجاج میں آل پاکستان بھَٹہ ایسوسی ایشن کے صدر امجد خان جگوال اور شجاع آباد بھَٹہ ایسوسی ایشن کے صدر انعام اللہ خان مگسی نے بھی شرکت کی۔ مزدوروں نے حکومتی پالیسی، بھَٹوں کی بندش اور زگ زیگ نامنظور کے نعرے لگائے۔ امجد خان جگوال نے کہا کہ حکومتی پالیسی، بھَٹوں کی بندش اور زگ زیگ ہمیں منظور نہیں کیونکہ اس سے لاکھوں مزدور جب بے روزگار ہو جائیں گے تو بے روز گاری کا بہت بڑا بحران آجائے گا۔ ہمارے بھَٹے سموگ کی وجہ نہیں بنتے۔ مزدوروں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ سموگ سے متاثرہ انسان دو چار سال تک تو زندہ رہ سکتا ہے لیکن ہماری روزی بند کر دی گئی تو ہم تو چار دن سے زیادہ زندہ نہیں رہ سکتے کیونکہ ہمارے پاس تو ایک دن سے زیادہ کا آٹا اور کھانے کا سامان ہی نہیں ہوتا۔ ہم مزدوری کرتے ہیں تو کھاتے ہیں۔اگر بھٹوں کو بند ہی کرنا ہے تو حکومت ہمارے گھروں کے خرچے پورے کرے۔

احتجاج

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...