نیب غیر جانبداری ثابت کرے، ججز، بیورو کریٹس، جرنیلوں کا بھی احتساب ہونا چاہئے : سراج الحق

      نیب غیر جانبداری ثابت کرے، ججز، بیورو کریٹس، جرنیلوں کا بھی احتساب ہونا ...

  



اسلام آباد (این این آئی)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ جب تک اپوزیشن کے ساتھ ساتھ حکمرانوں کا(بقیہ نمبر18صفحہ12پر)

 احتساب نہیں ہوتا،لوگ اسے یک طرفہ احتساب کہیں گے۔نیب کو اپنی غیر جانبداری ثابت کرنا ہوگی۔ نیب کی اب تک کی کارکردگی چند لوگوں کی گرفتاری کے علاوہ کچھ نہیں۔سیاست دانوں کے ساتھ ساتھ ججز،بیوروکریٹس اور جرنیلوں کا بھی احتساب ہونا چاہیے۔جب تک سب کا بلاامتیاز احتساب نہیں ہوتا،احتساب کے پورے نظام پر انگلیاں اٹھتی رہیں گی۔انہوں نے کہاکہ حکومت احتساب کے تمام وعدے بھول چکی ہے۔ وزیراعظم اگر واقعی احتساب کا شفاف نظام چاہتے ہیں تو سب سے پہلے خود کو پیش کریں اور جن وزیروں مشیروں پر کرپشن یا لوٹ کھسوٹ کے الزامات ہیں، انہیں احتساب کے اداروں کے حوالے کریں۔نیب کے چیئرمین کا یہ بیان کہ نیب ابھی کارروائی نہیں کرتا اور چند وزراء اعلانات پہلے کردیتے ہیں نے بھی اس ادارے کو فریق بنادیا ہے۔عالمی یوم انسداد کرپشن کے موقع پر ایک بیان میں سراج الحق نے کہا کہ کرپشن بڑے لوگ کرتے ہیں اور اس کے برے اثرات غریب پر پڑتے ہیں۔ملکی دولت لوٹنے والوں کا آج تک کسی نے ہاتھ نہیں روکا۔ملک کے اربوں کھربوں ڈکار لیے گئے لیکن احتساب کے تمام تر دعوے نقش بر آب ثابت ہوئے۔موجودہ حکومت کی اب تک کی کارکردگی تقاریر کے علاوہ کچھ نہیں۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ تبدیلی سے عام آدمی پر بوجھ پڑا ہے امراء پر نہیں۔ غریب کے لیے زندگی گزارنا اجیرن ہوچکاہے۔ تعلیم، صحت اور روزگار کی سہولتیں ختم ہو کر رہ گئی ہیں۔ عام آدمی کے لیے دو وقت کے کھانے کا انتظام کرنا اور سفید پوش کے لیے اپنی سفید پوشی کا بھرم رکھنا مشکل ہوگیاہے۔ 

سراج الحق

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...