بڑے سیکٹرز کی مصنوعات کیلئے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم لانے کا فیصلہ

  بڑے سیکٹرز کی مصنوعات کیلئے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم لانے کا فیصلہ

  



ملتان (نیوز رپورٹر) فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) ننے بڑے سیکٹرز کی مصنوعات کے لئے ٹریک اینڈ ٹریس نظام لا نے کا فیصلہ کیا ہے بتایا گیا ہے کہ ایف بی آرنے ریونیو خسارہ کے تدارک کے لئے 'پیداوار اور فروخت کے اعدادو شمار کو کم ظاہر کرنے کی وجہ سے اور مخصوص اشیا ء (بقیہ نمبر22صفحہ12پر)

و مصنوعات پر لاگو فیڈرل ایکسائزڈیوٹی و سیلز ٹیکس کی ادائیگی کو یقینی بنانے کے لئے مخصوص مصنوعات جیسا کہ سیمنٹ،چینی،کھاد اور مشروبات کی درآمدات اور اسکی پیداوار کو جانچنے کے لئے الیکٹرانک ٹریک اینڈ ٹریس نظام رائج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے پراجیکٹ دفتر نے توثیق کی ہے کہ مصنوعات کی الیکٹرانک مانیٹرینگ و فروخت اور چار بڑے سیکٹر ز کی مصنوعات چینی،سیمنٹ،کھاد اور مشروبات کے ٹریک اینڈ ٹریس نظام کے حوالے سے جاری ہونے والے لائسنس کے لئے بولی لگانے کے لئے تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ لائیسنسنگ کے لئے ہدایات اور متعلقہ دستاویزات جنوری 2020 میں تمام بڑے سیکٹر ز اور سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد شائع کر دی جائیں گی،بہترین فیصلہ سازی کے لئے ایف بی آر تمام متعلقہ سٹیک ہولڈرز سے ان کی آراء حاصل کرنیکے لئے مختلف اجلاس کا انعقاد کرے گا۔اس سلسلے میں پہلی میٹنگ 2 دسمبر کو سیمنٹ مینوفیکچرز سے ہوئی،کھاد مینوفیکچرز سے دوسری میٹنگ 5 دسمبر کو منعقد ہوئی۔ اور تیسری میٹنگ 12 دسمبر کو کی جائے گی۔

سسٹم

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...