مردان، بیسک ایجوکیشن کمیونٹی سکولز کی خواتین اساتذہ کا احتجاجی مظاہرہ

مردان، بیسک ایجوکیشن کمیونٹی سکولز کی خواتین اساتذہ کا احتجاجی مظاہرہ

  



مردان(بیورورپورٹ)بیسک ایجوکیشن کمیونٹی سکولز کے خواتین اساتزہ نے اپنے مطالبات کے حق میں مردان پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اٹھائے جس پر انکے مطالبات درج تھے مظاہرے کی قیادت ٹیچرفرہاد،نگینہ اور عامر سہیل کررہی تھی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ ہم پچیس سال سے کمیونٹی سکولوں میں پڑھا رہے ہیں اور زیادہ تر اساتزہ اورایج ہوچکے ہیں جبکہ پچھلے سال ہمارے ساتھ مرکزی حکومت نے وعدہ کیاتھا کہ بیسک کمیونٹی سکولز کے ٹیچرز کو ریگولرائز کیاجائیگا لیکن ابھی تک ہم ریگولر نہیں ہوئے انہوں نے کہا اس وقت صوبہ خیبرپختونخوا میں چوبیس سو اور پورے ملک میں گیارہ ہزار اساتزہ کمیونٹی سکولوں سے وابستہ ہیں جن میں ستر فیصد خواتین جبکہ تیس فیصد مرد اساتزہ ہیں اور سات لاکھ بچوں کو پڑھا رہے ہیں مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اپنا وعدہ پورا کرکے بیسک ایجوکیشن کمیونٹی سکولز کے اساتزہ کو مستقل کیاجائے یادرہے کہ بیسک ایجوکیشن کمیونٹی سکولز پراجیکٹ وفاقی محکمہ تعلیم کے زیرنگرانی 1995سے چلاآرہاہے جس میں گھروں اور حجروں میں عارضی طورپر سکولوں میں اساتزہ بچوں کو پڑھارہاہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر