فکسڈ ٹیکس کی مخالفت شروع سے کی ہے،ملک مہر الہٰی

فکسڈ ٹیکس کی مخالفت شروع سے کی ہے،ملک مہر الہٰی

  



پشاور(سٹی رپورٹر) پشاور کے تاجروں نے حکومت کی جانب سے فکسڈ ٹیکس لینے کے فیصلے کو مسترد کر تے ہوئے حکومتی فیصلے کیخلاف لائحہ عمل طے کرنے کا عندیہ دے دیا اس حوالے سے مرکزی تنظیم تاجران کے صوبائی صدر ملک مہر الٰہی کا کہنا ہے کہ ہم نے پہلے بھی فکسڈ ٹیکس کی مخالفت کی ہے حکومتی فیصلے میں تاجروں کو اعتماد میں نہیں لیا گیا اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اکثر بڑی دکانیں ہونے کے باوجود ان کا ذریعہ آمدن کم ہے وہ کس طرح یہ ٹیکس ادا کریں گے اس سے ٹیکس پیڈ کرنے والوں کی تعداد میں کمی آئے گی جس کاخمیازہ بھی حکومت کو ہی بھگتنا پڑ ے گادکانداروں پرسیل کے حساب سے ٹیکس نافذ کیا جائے اور یوٹیلیٹی بلز ٹیکس کو اس سے منہا کیا جائے ہمیں ابھی تک یہ بھی نہیں بتایا گیا کہ فکسڈ ٹیکس لاگو کرنے کے بعد ہم سے دیگر ٹیکس بھی وصول کئے جائیں گے یا نہیں موجودہ مہنگائی اور معاشی مندی کے حالات میں تونان شبینہ کمانا بھی دشوار ہے ایسے میں بے حساب ٹیکس کی ادائیگی کسی صورت قبول نہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...