عمران خان نے آمر کے دور کو پاکستان کا فخریہ دور کہ کر جمہوریت کی نفی کی: پیپلز پارٹی 

    عمران خان نے آمر کے دور کو پاکستان کا فخریہ دور کہ کر جمہوریت کی نفی کی: ...

  



اسلام آباد (این این آئی)پیپلز پارٹی کے رہنماؤں سینیٹر مولا بخش چانڈیو اور شیری رحمن نے وزیر اعظم عمران خان کی تقریر پر رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے ایک آمر کے دور کو پاکستان کا فخریہ دور کہہ کر پاکستان کی نفی کی ہے۔وہ نوجوان نسل کو گمراہ کر رہے ہیں،ان کی حکومت کو ڈیڑھ سال گذر گیالیکن وہ آج بھی کنٹینر پر کھڑے ہیں انہیں یقین ہی نہیں آرہا کہ وہ ملک کے وزیر اعظم ہیں۔ اپنے ایک بیان میں پیپلز پارٹی کے مرکزی ترجمان سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ ایک بارپھر وزیر اعظم عمران خان نے آمریت کا پر چارکیا،خان صاحب جمہوریت کی برائی اور آمریت کے گن گاتے نہیں تھکتے،قوم نے جتنا گھبرانا تھا گھبرا چکی، اب گھبرانے کی باری خان صاحب کی۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ خان صاحب جمہوریت کی برائی اور آمریت کے گن گاتے نہیں تھکتے، عمران خان نوجوان نسل کو مسلسل گمراہ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خان صاحب نے صنعت و زراعت سمیت ہر شعبہ تباہ کر دیا۔قوم ڈیڑھ سال کی کارکردگی کا پوچھتی ہے تو یہ کہتے ہیں گھبرانا نہیں۔مولابخش چانڈیو  نے کہاکہ سلیکٹڈ کو یاد رکھنا چاہئے کہ وزیراعظم تقریروں کیلئے نہیں مسائل کیلئے حل کیلئے ہوتا ہے۔دریں اثناء پاکستان پیپلز پارٹی کی نائب صدر شیری رحمن نے بھی وزیر اعظم کی تقریر کے ردعمل میں اپنے بیان میں کہا ہے کہ عمران خان کو کب یقین آئے گا وہ ملک کے وزیراعظم ہیں۔ ڈیڑھ سال گزرنے کے بعد بھی یہ کنٹینر پر کھڑے ہیں، حکومتیں کنٹینر پر کھڑے ہو کر نہیں چلائی جاتیں۔ شیری رحمان نے کہاکہ آپ لوگوں کو احتساب اور میرٹ پر لیکچر نہ دیں، آپ کا احتساب خود سے نہیں بلکہ مخالفین سے شروع ہوتا ہے۔انہوں نے کہاکہ آپ مخالفین کی نقل تو اتار سکتے ہیں حکومت نہیں کر سکتے، آپ کی سیاست سے لگتا ہے بہت جلد آپ ملک کو ایک اور بحران میں ڈالیں گے۔

پیپلز پارٹی

مزید : صفحہ آخر