بلوچستان میں تلور کے شکار کیلئے عرب باشندوں کو اجازت نامے جاری

  بلوچستان میں تلور کے شکار کیلئے عرب باشندوں کو اجازت نامے جاری

  



  کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک)بلوچستان حکومت نے نایاب پرندے تلور کے شکار کے لیے صوبے میں 18 علاقے مختص کردیے ہیں اور محکمہ وائلڈ لائف حکام کی جانب سے قطر سمیت مختلف عرب ممالک کے باشندوں کواجازت نامے بھی جاری کیے گئے ہیں۔بلوچستان میں تلور کے شکار کیلیے علاقے ضلع موسٰی خیل، قلعہ سیف اللہ، جھل مگسی، نوشکی، چاغی، دالبندین، آواران، واشک، پنجگور، سبی،لسبیلہ، کچھی، ڈیرہ بگٹی اور  نوکنڈی میں مختص کیے گئے ہیں۔حکومت بلوچستان نے100 تلوروں کے شکار کے لیے ایک لاکھ ڈالر فیس مقررکر رکھی ہے جب کہ صوبائی حکومت نے شکار میں استعمال ہونے والے ایک باز کے لیے ایک ہزار ڈالر فیس رکھی ہے۔جھل مگسی میں شکارکے لیے قطری شیخ فلاح بن جاسم کو مخصوص علاقہ الاٹ کیا گیا ہے، قطری شیخ کی جانب سے شکار کے لیے صوبائی حکومت کے اکاؤنٹ میں ایک لاکھ 31 ہزار ڈالرکاچالان جمع کرایا گیا ہے۔

  تلور 

مزید : صفحہ اول