تاخیرسے سہی مگر پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کا آغاز خوش آئند

          تاخیرسے سہی مگر پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کا آغاز خوش آئند

  



لاہور(تجزیہ افضل افتخار)سری لنکاکی کرکٹ ٹیم دو ٹیسٹ میچز کی سیریز کھیلنے کے لئے پاکستان پہنچ گئی ہے دس سال قبل اسی ٹیم نے آخری مرتبہ پاکستان کا دورہ کیا جب لاہور میں ٹیسٹ میچ سے قبل لنکن کھلاڑیوں پر دہشت گردوں نے حملہ کیا اور کئی لنکن کھلاڑیوں کوزخمی کردیا جس کے نتیجہ میں پاکستان میں دس سال تک ٹیسٹ کرکٹ کے دروازے بند ہوگئے اور کوئی ٹیم بھی پاکستان آکر کھیلنے کے لئے تیار نہیں ہوئی دس سال کاعرصہ کم نہیں ہوتا اور اس عرصہ میں پاکستان میں ٹیسٹ کرکٹ کو جس قدر نقصان ہواہے اس کا ازالہ تونہیں کیاجاسکتا مگر اس بات پر شکر ضرور کیاجاسکتا ہے کہ اب دیر سے ہی مگر پاکستان میں بھی ٹیسٹ کرکٹ کاا ٓغازہونے جارہا ہے اور سری لنکاکی ٹیم ہی وہ ٹیم ہے جس نے آخری مرتبہ دورہ کیا اور اب اسی ٹیم نے ہمت کرکے پاکستان کا دورہ کیا ہے لنکن ٹیم نے اس سے قبل حال ہی میں پاکستان میں ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز بھی کھیلی تھی اور اس پر شائقین کرکٹ لنکن کرکٹ بور ڈ کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

اب اسی ٹیم نے پاکستان میں ٹیسٹ کرکٹ کو بھی آباد کرنے کیلئے پہلا قدم اٹھایا ہے اور اس پر بھی ہمیں ان کا شکرگزار ہونے کی ضرورت ہے شائقین کرکٹ کا بھی انتظار ختم ہوا ہے اور پاکستان میں ٹیسٹ کرکٹ کی بحالی ایک بہت بڑاکام ہے کیونکہ اصل کرکٹ تو ٹیسٹ کرکٹ ہی ہے اور جس ملک میں اس کا خاتمہ ہوجائے اس کی ٹیم کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے سری لنکاکی ٹیم نے د و ٹیسٹ میچز کھیلنے ہیں پہلا ٹیسٹ میچ پنڈی میں کھیلاجائے گا اور اس کے بعد دوسرا ٹیسٹ میچ کراچی میں شیڈول ہے اس حوالے سے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں اور امید ہے کہ یہ دورہ ایک کامیاب دورہ ثابت ہوگا اور اس کے بعد دیگر ممالک کی کرکٹ ٹیمیں بھی پاکستان میں آکر ٹیسٹ کرکٹ کھیلنا شروع کردیں گی۔

اس لحاظ سے اس دورہ سری لنکاکی بہت زیادہ اہمیت ہے کھلاڑیوں کو حکومت کی جانب سے فول پروف سیکورٹی بھی خوش آئند ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...