محکمہ اینٹی کرپشن و اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے آگاہی واک کا انعقاد

محکمہ اینٹی کرپشن و اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے آگاہی واک کا انعقاد

  



 کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر برائے اینٹی کرپشن، آب پاشی اور زکواۃ و عشرسہیل انور سیال  نے کہاہے کہ نئی نسل کو کرپشن فری پاکستان دینا چاہتے ہیں،کرپشن کا خاتمہ ہماری معاشی و معاشرتی ترقی کا ضامن ہے۔ انسداد بدعنوانی کو بطور اسباق نصاب میں شامل کر لیا جائے جب کہ کرپشن ایک ناسور کی شکل اختیار کر چکا ہے اس کا  خاتمہ نہیں کیا گیا تو آئندہ آنے والی نسلیں ہمیں کبھی  معاف نہیں کریں گی۔ان خیالات کا اظہارانہوں  نے سندھ کے محکمہ اینٹی کرپشن و اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے منعقدہ اگاہی واک بعنوان(بدعنوانی سے پاک پاکستان)کی قیادت کرتے ہوئے میڈیا کے نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔آگاہی واک کا انعقاد نیو سندھ سیکرٹریٹ عمارت نمبر1 براستہ  صوبائی اسمبلی عمارت اور آرٹس کونسل تک کیا گیا۔واک میں صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ، چیئرمین اینٹی کرپشن،ڈائریکٹر جنرل محکمہ اطلاعات منصور احمد شیخ،محکمہ اینٹی کرپشن کے افسران و عملہ، سرکاری ملازمین  و افسران  سمیت صوبائی محکموں کے سیکرٹریز،  ڈائریکٹر جنرل  مختلف اداروں کے چیئرمین، سول سوسائٹی کے نمائندگان، اسکاؤٹس، طلباوطالبات، میڈیا نمائندگان اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ریلی کے شرکا نے انسداد بدعنوانی پر مبنی بینرز اور پلے کارڈ اٹھائے ہوئے تھے۔واک کا بنیادی مقصد پاکستان کو بدعنوانی سے پاک کرکے ایک شفاف اور انصاف پر مبنی معاشرے کی تشکیل دینا ہے۔سہیل انورسیال نے کہاکہ کرپشن ہر شکل میں قابل مذمت ہے کرپشن کے خاتمے کے لیے نظام میں تبدیلی لاتے ہوئے جرات مندانہ اقدامات کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ سندھ بھر میں بدعنوانی کے خاتمے کے لیے بلا امتیاز کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے اور بدعنوان عناصر کے خلاف گھیرامزید تنگ کیا جا رہا ہے۔صوبائی وزیرنے کہاکہ احتسابی عمل بلاتفریق جاری رہنا چاہیے۔واک میں بے پناہ تعداد میں لوگوں کی شرکت اس بات کا مظہر ہے کہ قوم کرپشن سے شدید  نفرت کرتی ہے

مزید : صفحہ آخر


loading...