وزیراعلیٰ کا یونیو رسٹی آف صوابی کیلئے 10کروڑ روپے، امداد سٹرکوں کی تعمیر کا اعلان

وزیراعلیٰ کا یونیو رسٹی آف صوابی کیلئے 10کروڑ روپے، امداد سٹرکوں کی تعمیر کا ...

  



پشاور/ صوابی (سٹاف رپورٹر/ بیورو رپورٹ) وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے یونیورسٹی آف صوابی کیلئے 10 کروڑ روپے گرانٹ ان ایڈ جبکہ یونیورسٹی کو درکار سڑکوں کی تعمیر کا اعلان کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ آئندہ صوبائی بجٹ میں یونیورسٹی آف صوابی اور ویمن یونیورسٹی کی تمام تر ضروریات کیلئے خصوصی طور پر فنڈز مختص کئے جائیں گے۔ اْنہوں نے کہاکہ موجودہ صوبائی حکومت نے صوبے میں نہ صرف اعلیٰ تعلیمی اداروں کا معیار بلند کیا ہے بلکہ صوبے میں آٹھ نئی یونیورسٹیاں بھی قائم کی ہیں جو کہ موجودہ صوبائی حکومت کا صوبے میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ کیلئے سنجیدہ اقدامات کی عکاسی کرتا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی وفاقی و صوبائی حکومت ملک کی معیشت کے استحکام کیلئے تمام ممکن اور خصوصی اقدامات کر رہے ہیں۔ اْنہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومتوں نے ملک کی معیشت کو کمزور کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی تھی۔ جب اقتدار ملا تو اکنامی کی حالت انتہائی ابتر تھی۔ تحریک انصاف کی صوبائی و مرکزی حکومت نے خصوصی طور پر معیشت کی بہتری پر توجہ مرکوز کی ہوئی ہے جبکہ اس مقصد کیلئے ملک میں سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے اقدامات کررہی ہے جس سے نہ صرف معیشت بہتر ہو گی بلکہ عوام کو روزگار کے مواقع بھی میسر آئیں گے۔ ہمارا مقصد صوبے اور پورے پاکستان کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنا ہے ہم سب نے ملکر اس ملک کی ترقی میں اپنااپنا حصہ ڈالنا ہے۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ نے ضلع صوابی میں یونیورسٹی آف صوابی اور ویمن یونیورسٹی کے مشترکہ کانوکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ہے۔ اس موقع پر سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، وزیراعلیٰ کے مشیر برائے صنعت عبد الکریم تور غر، ایم پی اے عبد السلام آفریدی، وائس چانسلر امتیاز علی خا ن، عاقب ا? خان، رنگیز خان، ڈائریکٹر سائنس و ٹیکنالوجی خالد خان، پروفیسر ڈاکٹر فصیح الزمان و دیگر بھی موجود تھے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ معیار ی تعلیم کا فروغ شروع دن سے ہی ہماری حکومت کی ترجیح رہی ہے۔ ہماری یونیورسٹیوں کے طلباء ملک کی سماجی و معاشی ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔موجودہ صوبائی حکومت خواتین کی تعلیم و ترقی پر بھی خصوصی توجہ دے رہی ہے۔ہم سمجھتے ہیں کہ کسی بھی معاشرے کی فلاح و ترقی میں تعلیم یافتہ خواتین کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہے۔ اْنہوں نے کہاکہ یونیورسٹی آف صوابی اور ویمن یونیورسٹی نے اتنے کم عرصے میں کامیابی کی منازل طے کی ہیں جو خوش آئند ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ صوبائی حکومت نے جدید تعلیم کے فروغ کیلئے شعبہ تعلیم میں اصلاحات نافذ کی ہیں جن کی بدولت شعبہ تعلیم میں کافی بہتری آئی ہے۔ کسی بھی ملک کی ترقی اور خوشحالی کیلئے تعلیم کا شعبہ نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ وزیراعلیٰ نے اپنے خطاب میں کہا کہ تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے صوبے کے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تمام کمزوریوں کی نشاندہی کی ہے اور جامعات کو صحیح سمت پر گامزن کیا ہے۔ ہم نے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں میرٹ اور شفافیت کو یقینی بنانا ہے جس کیلئے صوبائی حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے۔وزیراعلیٰ نے مشترکہ کانوکیشن کے موقع پر طلباء و طالبات میں ڈگریاں بھی تقسیم کیں۔ کانوکیشن میں وزیراعلیٰ نے مجموعی طور پر 710 طلباء و طالبات کو ڈگریاں دیں جس میں 370 طلباء و طالبات کو سائنس اور آرٹس گروپ میں بی ایس، بی ایس سی، ایم اے اور ایم ایس سی کی ڈگریاں بھی دیں۔اسی طرح کانوکیشن میں یونیورسٹی آف صوابی کے 32 طلباء و طالبات کو گولڈ میڈلز بھی دیئے گئے۔ کانوکیشن میں ویمن یونیورسٹی صوابی کے 338 طلباء و طالبات کو سائنس اور آرٹس گروپ میں بی ایس، ایم اے اور ایم ایس سی کی ڈگریاں بھی دی گئیں۔ اسی طرح کانوکیشن میں ویمن یونیورسٹی کے 40 طالبات کو گولڈ میڈلز بھی دیئے گئے۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ ان یونیورسٹیوں سے فارغ التحصیل نوجوان ملک کی سماجی و معاشی ترقی میں اپنا کردار ادا کریں گے۔ اْنہوں نے کہاکہ وہ اْمید رکھتے ہیں کہ فارغ التحصیل طلباء عملی میدان میں اپنے ہنر کے جوہر دکھائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے اپنے خطاب کے دوران ضلع صوابی میں یونیورسٹیوں کے قیام پر سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو خراج تحسین بھی پیش کیا۔اْنہوں نے کہاکہ وہ اْمید رکھتے ہیں کہ یہ دونوں یونیورسٹیاں مستقبل میں مزید بہتری اور کامیابی کا مظاہر ہ کریں گی۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت تدریسی و تحقیقی میدان میں اہداف کے حصول کیلئے ان جامعات کے ساتھ بھر پور تعاون جاری رکھے گی۔ یاد رہے کہ ویمن یونیورسٹی کا یہ پہلا جبکہ یونیورسٹی آف صوابی کا یہ دوسرا کانوکیشن تھا۔

مزید : صفحہ اول


loading...