حج کمپنیوں کی تعداد کم کرنے کا فیصلہ مسلط نہ کیا جائے :جمال ترہ کئی

حج کمپنیوں کی تعداد کم کرنے کا فیصلہ مسلط نہ کیا جائے :جمال ترہ کئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                        لاہور (رپورٹ:میاں اشفاق انجم) پرائیویٹ حج سکیم کے904حج آرگنائزر حج آپریشن2024ءکو مثالی بنانے کے لئے پیش قدمی کریں ،کمپنیوں کی تعداد کم کرنے کا فیصلہ مسلط نہ کیا جائے،مشاورت کے لئے وقت دیا جائے۔ حج 2024ءکلسٹر کی شرط ختم کی جائے، ملک بھر کے زونلز چیئرمین میرے دست بازو ہیں، مل کر حج آرگنائزر کے مفادات کا تحفظ کریں گے۔لاہور میں حج2024ءکی تیاریوں کے سلسلے میں ہونے والی اے جی ایم میں حج آرگنائزر نے مرکزی چیئرمین جمال خان ترہ کئی،زونلز چیئرمینوں اور مرکزی ایگزیکٹو باڈی کے فیصلوں کی تائید کر دی ۔ اے جی ایم سے مرکزی چیئرمین جمال خان ترہ کئی ،چیئرمین پنجاب سعید احمد ملک، کراچی سے ہوپ کے رہنما بلال فصیح، ایگزیکٹو ممبر امتیاز الرحمن چودھری اور شاہد رفیق کا خطاب۔ چیئرمین جمال خان ترہ کئی نے کہا پرائیویٹ حج سکیم کی ایک تاریخ ہے اس کو مٹانے والے خود مٹ گئے،904 حج آرگنائزر میرا فخر ہیں۔ حج آپریشن مثالی بنانے کے لئے پیش بندی کریں، پیکیج بنانا شروع کریں میں وفاقی وزیر مذہبی امور انیق احمد، ڈی جی حج عبدالوہاب سومرو، معاون خصوصی وزیراعظم علامہ طاہر اشرفی اور اپنے زونل چیئرمین، ایگزیکٹو باڈی کے ممبران کا شکر گزار ہوں جن کی کوششوں سے ہم اپنی منزل کی طرف رواں دواں ہیں ۔خادم حرمین شریفین کی ضیوف الرحمن کے لئے خدمات اور اقدامات قابل ستائش ہیں ۔ چیئرمین پنجاب سعید احمد ملک نے مرکزی چیئرمین سے مطالبہ کیا آپ حج آرگنائزر کے حقوق کی آواز بنیں ان کی عزت تکریم میں اضافے کے لئے جدوجہد جاری رکھیں ہم آپ کے شانہ شانہ موجود ہیں۔سعید احمد ملک نے کہا2011ءمیں سپریم کورٹ کے حکم پر کوٹہ حاصل کرنے والی96کمپنیوں کا کوٹہ کم از کم100کرنے میں کردار ادا کریں۔ سندھ زون کے رہنما بلال فصیح نے کہا کلسٹر کی پیش بندی کے لئے ہوپ نے موثر منصوبہ بندی کی ہے کسی کمپنی کی انفرادی حیثیت ختم نہیں ہو گی۔ پیکیج بنانے سے لے کر بکنگ کرنے اور حاجیوں کی خدمت کرنے تک سب کا علیحدہ مقام اور حیثیت برقرار رہے گی۔امتیاز الرحمن، چودھری شاہد رفیق، چودھری عادل امتیاز بھٹی، میاں اشفاق انجم، جاوید اقبال، خرم ثقلین، فیصل لیاقت، پروفیسر زاہد فاروق نے بھی سوالات کئے۔