کراچی،آر جے مال میں آتشزدگی ،مفرور بلڈر کے بیٹے سمیت 3ملزم گرفتار،ڈی وی آر برآمد

  کراچی،آر جے مال میں آتشزدگی ،مفرور بلڈر کے بیٹے سمیت 3ملزم گرفتار،ڈی وی آر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                            کراچی (این این آئی) سٹی کورٹ میں پولیس نے آر جے مال میں آتشزدگی واقعہ کے مقدمے میں مفرور بلڈر کے بیٹے سمیت 3 ملزمان کو گرفتار کر کے ڈی وی آر برآمد کرنے کا انکشاف کردیا۔سٹی کورٹ میں آر جے مال میں آتشزدگی واقعہ کے مقدمے میں پولیس نے 3 نئے ملزمان بلڈر کے بیٹے حسان ڈونی،حاشر اور یاور سمیت 8 ملزمان پیش کردیئے۔تفتیشی افسر نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ مقدمہ میں اہم پیش رفت ہوئی ہے 3ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے جو شواہد مٹانے کی کوشش کر رہے تھے۔شواہد میں مال کی ڈی وی آر اور دستاویزات شامل تھیں۔عدالت نے ملزمان سے استفسار کرتے ہوئے کہا آپ لوگ وہاں کیا کر رہے تھے؟ملزمان نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ ہم فائل حسان کے پاس لے کر جا رہے تھے ہمیں گرفتار کر لیاگیا۔سرکاری وکیل نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے رپورٹس کے لئے متعلقہ اداروں کو لیٹر لکھے ہیں اور عمارت کے دستاویزات کی جانب پڑتال جاری ہے سرکاری وکیل نے کہا کہ 11 جانیں گئی ہیں کوئی مذاق نہیں ہے کسی بھی ذمہدار کو رعایت نہیں دی جائے گی۔عامر منسوب ایڈووکیٹ نے کیا حسان ڈونی کا اس واقعہ اور شاپنگ مال سے کوئی تعلق نہیں۔عدالت نے سوال کیا کہ ڈی وی آر غائب ہے وہ کہاں ہے؟سرکاری وکیل نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ حسان ڈونی کو گرفتار تو اس کے قبضے سے ڈی وی ڈی آر برآمد کی ہے۔عدالت نے استفسار کیا کہ کیسے برآمد کی اور اس وقت کہاں تھی ڈی وی آر؟سرکاری وکیل نے کہا شاپنگ مال کی گلی کے اندر سے برآمد کی گئی تھی۔وکیل صفائی نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب جھوٹ کہا جارہا ہے سرکاری وکیل کو جھوٹ کہنا بھی نہیں آتا۔وکیل صفائی نے ملزم کا نام زیر دفعہ 63کے تحت خارج کرنے کی درخواست دائر کردی۔عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پہلے تحقیقات ہونے دیں پھر درخواست دائر کی جائے۔ابھی معاملہ تحقیقات پر ہے تحقیقات ہونے دیں ساری چیزیں کلیئر ہونے دیں۔عامر منسوب ایڈووکیٹ نے کہا مقدمہ میں پراسیکیوشن خود کہ رہی ہے کہ میرا کلائنٹ ملوث نہیں ہے اور میرے کلائنٹ کو تھانے میں پوری رات لاک اپ میں رکھا گیا جبکہ دیگر ملزمان کو باہر رکھا گیا۔عدالت نے پولیس حکام پر اظہار برہم کرتے ہوئے کہا ایسے کیسے چلے گا کسی کو لاک اپ پر بٹھا دو اور کسی کو کہیں۔اگر ایک فرد لاک میں ہے تو تم بھی لاک اپ میں رہیں گے عدالت نے پولیس حکام کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا اگر دوبارہ کوئی شکایت آئی تو تمہارے خلاف کارروائی کی جائے گی۔عدالت نے گرفتار ملزمان کو 4 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کرتے ہوئے فریقین کو نوٹس جاری کردیئے۔

آتشزدگی