ایک جیل سے بچنے کیلئے، دوسرا جیل سے نکلنے کیلئے الیکشن لڑ رہا ہے،بلاول بھٹو

ایک جیل سے بچنے کیلئے، دوسرا جیل سے نکلنے کیلئے الیکشن لڑ رہا ہے،بلاول بھٹو
ایک جیل سے بچنے کیلئے، دوسرا جیل سے نکلنے کیلئے الیکشن لڑ رہا ہے،بلاول بھٹو

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کوہاٹ (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ ایک جیل سے نکلنے کے لیے اور دوسرا جیل سے بچنے کے لیے الیکشن لڑ رہا ہے۔

کوہاٹ میں ورکرز کنونشن سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ کہاگیا کہ خیبر پختونخوا میں سکیورٹی معاملات ٹھیک نہیں یہاں دہشتگرد پھر رہے ہیں۔کہا گیا کہ فیصلہ تو ہو گیا ہے خیبر پختونخوا میں تو کسی اور کو وزیرِ اعلیٰ بنانا ہے، میں نے کہا کہ جیالے ڈرنے اور جھکنے والے نہیں، پی پی کے جیالے مشکل وقت میں پارٹی کے ساتھ کھڑے ہیں۔ پیپلز پارٹی حکومت بنا رہی ہے، حکومت بنا کر عوام کو ان کا حق دیں گے، ہم امید کرتے ہیں کہ پوری دنیا کو بتایا جائے گا کہ مسلم امہ کے لیڈر کو پھانسی پر کیوں چڑھایا گیا، ہم عوام پر یقین رکھتے ہیں،  ہمارے قائد نے سکھایا تھا کہ طاقت کا سر چشمہ عوام ہیں، بانی پی ٹی آئی اور نواز شریف نے 18ویں ترمیم پر عمل درآمد نہیں کیا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ میں عوام کے مسائل کے حل کے لیے الیکشن لڑ رہا ہوں، پیپلز پارٹی اشرافیہ کی نہیں، غریبوں، مزدوروں اور سفید پوش طبقے کی نمائندگی کرتی ہے، ہم روایتی اور تقسیم کی سیاست کو دفن کر کے خدمت کی سیاست کا آغاز کریں گے۔ہم کسان کارڈ کے ذریعے کسانوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے الیکشن لڑ رہے ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ صحت کی مفت سہولت ملک کے ہر گھر میں ہو، ہم چاہتے ہیں پختون خوا کے ہر ضلع میں این آئی سی وی ڈی کی طرح مفت علاج کی سہولت ہو، ہم سمجھتے ہیں کہ ریاست عوام کو مفت علاج کی سہولت پہنچا سکتی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے کنونشنز کے سلسلے بہت کامیاب ہو رہے ہیں، پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے یہ پیغام پہنچا دیا ہے کہ خیبر پختون خوا میں پیپلز پارٹی موجود ہے۔الیکشن کا شیڈول ابھی نہیں آیا، پیپلز پارٹی کے جیالے ہمیشہ الیکشن کے لیے تیار ہیں، پیپلز پارٹی نے ہر دور میں عوامی سیاست اور پسماندہ علاقوں کے مظلوم عوام کی نمائندگی کی ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ غربت کا مقابلہ کیا ہے، کمزور طبقے کی نمائندگی کی ہے، ہمارا کوئی سیاسی مخالف نہیں، کوئی کھلاڑی یا کوئی اور ہمارا مقابلہ نہیں کر سکتا، ہمارا مقابلہ سیاست دانوں سے نہیں، بے روزگاری، مہنگائی اور غربت سے ہے، میں اور میری پارٹی تین نسلوں سے یہی جدوجہد کرتے آ رہے ہیں۔

مزید :

قومی -