زرداری نے نگراں سیٹ اپ کیلئے ایم کیو ایم سے نام مانگ لئے

زرداری نے نگراں سیٹ اپ کیلئے ایم کیو ایم سے نام مانگ لئے
زرداری نے نگراں سیٹ اپ کیلئے ایم کیو ایم سے نام مانگ لئے

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)صدرآصف علی زرداری نے نگراں سیٹ اپ کیلئے ایم کیو ایم سے نام مانگ لئے ہیں۔ڈاکٹرفاروق ستارکاکہناہے کہ رابطہ کمیٹی نے ناموں پرغور کیلئے مشاورت شروع کردی ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیوایم رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینرڈاکٹرفاروق ستار نے کہا کہ نگراں سیٹ اپ کے لئے پہلی بار تمام جماعتوں سے رابطہ کیا گیا ہے۔فاروق ستار نے کہا تمام جماعتوں سے مشاورت حکومت کا اچھا اقدام ہے۔ان کاکہناتھاکہ مقامی حکومتیں جمہوریت کی نرسری ہوتی ہیں۔کراچی میں ماس ٹرانزٹ پروگرام جلد شروع کیا جائے گا ، بلدیاتی نظام اگر ہوتا تو شہر کا نقشہ بدل چکا ہوتا۔ نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے فاروق ستار نے سوال اٹھایا کہ فخرو الدین جی ابراہیم چیف الیکشن کمشنر ہیں یا سیکریٹری الیکشن کمیشن نے یہ عہدہ سنبھال لیا ہے۔ چیف الیکشن کمشنر کے ہوتے ہوئے سیکریٹری الیکشن کمیشن کیوں فیصلے سنا رہے ہیں۔ انکا کہنا تھا کہ اس سے غلط تاثر عوام میں جا رہا ہے، تمام فیصلے الیکشن کمیشن کو اور چند پارٹیوں کے بجائے تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیتے ہوئے سنانے چاہیے۔فاروق ستار نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جہاں سویلین حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے ناکام ہو جاہیں وہاں آئینی طور پر مجبورا فوج کو مدد کے لیے بلایا جاتا ہے۔ ووٹر لسٹوں کی تصدیق کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ بعض سیاسی جماعتیں چاہتی ہیں کہ انکے مرکز پر بیٹھ کر انکی مرضی سے ووٹر لسٹیں تیار کی جائیں ،ایک ہی مردم شماری پر دو بار حلقہ بندیاں نہیں کرائی جا سکتی۔انکا مزید کہنا تھا کہ تمام سیاسی جماعتیں جلد، آزار اور شفاف انتخابات کے انعقاد کے لیے حکومت، نگراں حکومت ، الیکشن کمیشن اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ہاتھ مضبوط کریں۔ ڈاکٹر طاہر القادری کی درخواست کے حوالے سے فاروق ستار کا کہنا تھا کہ طاہر القداری کی درخواست آئینی و قانونی معاملہ ہے، پہلے انکے دھرنے اور اب انکی درخواست کو سازش قرار دیا جا رہا ہے۔ اس پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار کیا جائے۔

مزید :

کراچی -