بریڈ فورڈ میں راجہ ٹھٹھرتی ’رعایا ‘سے دور کی تقریب میں بد نظمی ، صحافیوں کابائیکاٹ،سعیدہ وارثی سے ملاقات کے دوران ہلڑ بازی

بریڈ فورڈ میں راجہ ٹھٹھرتی ’رعایا ‘سے دور کی تقریب میں بد نظمی ، صحافیوں ...

  

بریڈ فورڈ ( مرز نعیم الرحمان سے)وزیراعظم راجہ پرویز اشرف برطانیہ جیسے ملک میں بھی پاکستانی پروٹوکول اور سرخ فیتے کا شکار رہے جس کے نتیجے میں صحافیوں نے بیڈ فورڈ قونصل خانے میںمشین ریڈایبل پاسپورٹ آفس کی تقریب کا بائیکاٹ کردیا۔ قونصل خانے میں صحافیوں اور اہم شخصیات کو مدعو کرنے سے لیکر باقی تمام معاملات میں من پسندی اوربد نظمی نظر آئی ۔ صحافیوں سمیت بڑی تعداد میں لوگ قونصل خانے کے باہر بارش اور برفباری میں بھیگتے رہے لیکن قونصل خانے کا عملہ صرف وزیر اعظم کو ہم وطنوں سے دور رکھنے پر ہی توجہ دیتا رہا ۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ وزیراعظم سے ملاقات کرنے والوں دو افراد ایسے بھی شامل تھے جو سستی ترین توانائی پیدا کرنے کا منصوبہ وزیراعظم کو پیش کرنا چاہتے تھے تاکہ پاکستان میں توانائی کے گھمبیر مسئلے کے حل میں وہ اپنا کردار ادا کرسکیں جبکہ اس کیلئے کسی غیر ملکی امداد یا بھاری سرمائے کی بھی ضرورت نہیں تھی ۔ کچھ لوگوں کا کہنا تھا کہ سفارتخانے کے عملے نے ن دونوں افراد کو پہلے ہی آگاہ کردیا تھا کہ وزیراعظم صرف مخصوس معاملات پر ہی تقریر کریں گے ۔برفبری اور بارش میں بھیگنے کے بعد یہ لوگ سفارتی عملے اور پاکستانی مقدر کو کوستے ہوئے چلے گئے ۔بعد میں وزیراعظم نے پاکستانی نژاد برطانوی حکومتی عہدیدار سعیدہ وارثی سے مقامی ہوٹل میں ملاقات کی ۔ قونصل خانے میں مشین ریڈ ایبل پاسپورٹ سنٹر کے اففتح کے بعد یہاں بھی وہی بد نظمی اور دھکم پیل ہوئی جس پر لوگوں نے وزیراعظم اور قونصل خانے کے ساتھ ساتھ انتظامی امور کے نگران ہم وطنوں کیخلاف نعرہ بازی بھی کی ۔ صھافیوں نے یہاں بھی بائیکاٹ کیا ۔وزیر اعظم راجا پرویز اشرف اور کامن ویلتھ امور سے متعلق برطانوی وزیر سعیدہ وارثی کی طویل میٹنگ جاری ہے جس دوران راجہ پرویز اشرف کی حمایت اور مخالفت میں نعرہ بازیہ اور ہلڑبازی بھی جاریرہی  ۔وزیر خارجہ حنا ربانی کھر ، ، طارق کیانی ، اور واجد شمس الحسن بھی تقریب میں موجودتھے ۔سعیدہ وارثی ہلڑ بازی میں ہی  تقریر کر کے  واپس چلی گئیں ۔

مزید :

قومی -