پاکستان میں3 ہزار 139 ایکڑ رقبہ پرفالسہ کی کاشت کی جاتی ہے

پاکستان میں3 ہزار 139 ایکڑ رقبہ پرفالسہ کی کاشت کی جاتی ہے

  

راولپنڈ ی( اے پی پی ) پاکستان میں فالسہ کی کاشت ً3 ہزار 139 ایکڑز رقبہ پر کی جاتی ہے جبکہ اس کی اوسط سالانہ پیداوار 4 ہزار 518 ٹن ہے۔ صوبہ پنجاب میں فالسہ کی کاشت 1 ہزار 446 ایکڑز پر کی جاتی ہے اور سالانہ پیداوار 2 ہزار 482 ٹن ہے۔زرعی ماہرین نے کہا ہے کہ فالسہ ایک پت جڑ پودا ہے جو سطح سمندر سے ایک ہزار میٹر بلندی تک کاشت کیا جاتا ہے۔ سردی میں اس کے پتے گر جاتے ہیں، کہر اور سردی اس کے لئے بہت مفید ہیںاورسخت کہر پڑنے سے اگر پودے کی اوپر والی شاخیں سوکھ بھی جائیں تو سطح زمین سے نئی شاخیں پھوٹ آتی ہیں۔

محکمہ زراعت کے ترجمان نے فالسہ کے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ شاخ تراشی کا عمل ماہ فروری میں مکمل کریں تاکہ سردی سے نئی شاخیں متاثر نہ ہوں۔ شاخ تراشی ہر سال کرنی چاہیے۔     (tca/sij/rhn 1220: 14)

*******

مزید :

کامرس -