کنٹرول لائن پر دیوار برہمن کی تعمیر کے اعلان پر خاموشی درست نہیں،عبدالرحمان مکی

کنٹرول لائن پر دیوار برہمن کی تعمیر کے اعلان پر خاموشی درست نہیں،عبدالرحمان ...

  

فیصل آباد(بیورورپورٹ) جماعةالدعوة سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی نے کہا ہے کہ بھارت کی طرف سے کنٹرول لائن پر دیوار برہمن کی تعمیر کے اعلان پر خاموشی درست نہیں۔بھارت سے یکطرفہ دوستی کی پینگیں بڑھانے کی بجائے مظلوم کشمیریوں کی کھل کر مددوحمایت کی جائے۔ کشمیری ہمارے بھائی ہیں اور کشمیر کشمیریوں کا ہے۔ تقسیم کشمیر کا کئی فارمولا قوم کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ مقبوضہ کشمیر میں آٹھ لاکھ بھارتی فوج کے بدترین مظالم سے ثابت ہو گیا کہ انڈیا کے پاس سوائے ظلم و تشدد کے اور کوئی چیز نہیں ہے۔ آفےسر کالونی مدےنہ ٹاون میںخطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ بھارت سے ویزہ سروس میں نرمی جیسے معاہدے پاکستان کے مفاد میں نہیں۔انڈیا پاکستانی دریاﺅں پر بنائے گئے غیر قانونی ڈیموں سے بجلی حاصل کر کے پاکستان کو ہی بیچنے کے منصوبوں پر عمل پیرا ہے۔ انڈیا پاکستان سے مذاکرات میں سنجیدہ ہے توآٹھ لاکھ فوج مقبوضہ کشمیر سے نکالے اور کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دیا جائے۔ مسئلہ کشمیر ہمارے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ ہے۔مظلوم کشمیریوں کو کسی صورت اکیلا نہیں چھوڑیں گے۔ انہوںنے کہاکہ افضل گورو کی پھانسی کو ایک سال گزر چکا ہے۔ جس طرح مقبول بٹ کو پھانسی دیکر شہید کیا گیا تو کشمیریوں کی تحریک نے بہت زیادہ عروج پکڑا۔ اسی طرح افضل گورو کی پھانسی سے بھی عوامی سطح پر یہ تحریک اور زیادہ منظم ہوئی ہے اور پوری کشمیری قوم اپنی آزادی، عزتوں و حقوق کے تحفظ کیلئے ایک دوسرے سے بڑھ کر جانوں کے نذرانے پیش کر رہی ہے۔

مکی

مزید :

صفحہ آخر -