سپریم کورٹ کی خیبرپختونخواہ اور پنجاب میں مسیحی برادری کی شادیاں رجسٹرکرنے کی ہدایت

سپریم کورٹ کی خیبرپختونخواہ اور پنجاب میں مسیحی برادری کی شادیاں رجسٹرکرنے ...
Supreme Court
کیپشن:   Christian Community

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے خیبرپختونخواہ اور پنجاب میں سیکریٹری یونین کونسلز کو مسیحی برادری کی شادیاں نادرا میں رجسٹرکرنے کی ہدایت کردی اور اِس ضمن میں ہندوکمیونٹی سے تجاویز طلب کرلی ہیں ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ میں پشاورچرچ حملہ کیس کی سماعت ہوئی ۔دوران سماعت اٹارنی جنرل سلمان اسلم بٹ نے ہندولڑکی سے متعلق معلومات عدالت کو فراہم کردیں جن کے مطابق اغواہونیوالی ہندولڑکی بھوجامائی مسلمان ہوگئی ، لڑکی کی جانب سے سندھ ہائیکورٹ میں اپیل دائر کی ہے کہ وہ اب مسلمان ہوگئی ، لڑکی کراچی کی جامعہ بنوریہ میں زیرتعلیم ہے جس پر عدالت نے قراردیاہے کہ معاملہ سندھ ہائیکورٹ میں آگیا، اس لیے سپریم کورٹ اس معاملے پر کوئی ریمارکس نہیں دے گی ۔ چیئرمین نادرا نے بتایاکہ اقلیتی برادری بھی پاکستان کے شہری ہیں ، ہریونین میں اپنی رجسٹریشن کراسکتے ہیں ،نادرا کے پاس سندھ کی کرسچین کمیونٹی کا ڈیٹا موجود ہے ۔عدالت نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے عبوری حکم نامے میں ہندوبرادری سے شادیوں کی رجسٹریشن کے عمل سے متعلق تجاویز طلب کرلیں جبکہ خیبرپختونخواہ اور پنجاب میں سیکریٹری یونین کونسلز کو مسیحی شادیاں رجسٹرڈ کرنے کی ہدایت کردی ۔ عدالت کاکہناتھاکہ کرسچن کمیونٹی کی شادیاں سیکریٹری یونینز کے ذریعے نادرا میں رجسٹرڈ ہوں گی ۔

مزید :

انسانی حقوق -اہم خبریں -