پاکستان کی اقتصادی شرح نمو 5.3 فیصد تک بڑھنے کی توقع ہے:کریڈٹ سوئس

پاکستان کی اقتصادی شرح نمو 5.3 فیصد تک بڑھنے کی توقع ہے:کریڈٹ سوئس

  

اسلام آباد(اے پی پی) مالی سال2016-17ء کے دوران پاکستان کی اقتصادی شرح نمو 4.9 تا5.3 فیصد تک بڑھنے کی توقع ہے۔ گزشتہ تین سال کے دوران پاکستان کے بینکنگ کے شعبہ کی کارکردگی ایشیا میں سب سے بہترین رہی ہے جبکہ گزشتہ پانچ سال کے دوران پاکستان کا بینکنگ کا شعبہ ایشیا مین دوسرے نمبر پر رہا ہے۔ سوئیزرلینڈ سے تعلق رکھنے والی ریٹنگ ایجنسی’’کریڈٹ سوئس‘‘نے پاکستانی معیشت کے حوالے سے تیار کی جانے والی اپنی تجزیاتی رپورٹ میں پاکستان کے بینکنگ کے شعبہ کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔ رپورٹ کے تحت موجودہ حکومت کی کاروبار دوست اقتصادی پالیسیوں کے باعث عالمی ادارے پاکستان کی معیشت میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں جبکہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ،متوسط آدنی والے افراد کے اخراجات میں اضافہ،افراط زر کی شرح میں کمی اور توانائی کے شعبہ کی صورتحال کی بہتری ملکی معیشت کی ترقی میں اہم کردار ادا کررہے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مالی سال2016-17ء کے دوران پاکستان کی اقتصادی شرح نمو میں4.9 تا5.3 فیصد کا اضافہ متوقع ہے۔ جبکہ ملک کا مالیاتی خسارہ مجموعی قومی پیداوار (جی ڈی پی)کے4.7 فیصد تک کم ہونے کی توقع ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں ہونے والی براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں بھی آئے روز اضافہ ہورہا ہے ۔اسی طرح گزشتہ سال کے دوران بینکوں کی جانب سے شرح سود میں کی جانے والی کمی کے باعث قرضوں کے حصول میں اضافہ ہوا ہے۔ جبکہ مرکزی بینک کی جانب سے شرح سود میں کمی کیلئے حالیہ سالوں کے دوران کئے جانے والے اقدامات سے بینکنگ کے شعبہ کی کاکردگی میں نمایاں اضافہ ہوا ہے ۔سوئس ادارے نے اپنی رپورٹ میں پاکستانی بینکوں کو ایشیا کے بہترین بینک قرار دیا ہے جس سے شعبہ کی کارکردگی کے اعتراف کا اظہار ہوتا ہے۔

مزید :

کامرس -