نیشنل ایکشن پلان کے بیشتر حصوں پر اب تک عمل نہیں ہوا ، بلاول بھٹو زرداری

نیشنل ایکشن پلان کے بیشتر حصوں پر اب تک عمل نہیں ہوا ، بلاول بھٹو زرداری

  

 واشنگٹن(آن لائن)پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف آپریشن سیاست اور تنازعات سے پا ک ہوناچاہیے، دہشتگردی اورانتہاپسندی کے خلاف مضبوط موقف رکھنے والی سیاسی جماعتوں کوانتقامی کارروائیوں پرتحفظات ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز واشنگٹن میں یونائیٹڈ انسٹی ٹیوٹ آف پیس تھک ٹینک سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ سیاسی رہنماؤں کے خلاف مقدمات قائم کرناغلط اورخطرناک ہے۔اس سے موجودہ حکومت کی قانونی حیثیت مجروح ہورہی ہے۔حکومت مخالفین کوسیاسی انتقام کانشانہ بنارہی ہے نیشنل ایکشن پلان پرتمام جماعتوں کااتفاق ہے تاہم نیشنل ایکشن پلان کے بیشترحصوں پر اب تک عمل نہیں ہواہے۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب میں بھی کارروائیاں ہونی چاہیے۔بلاول کاکہنا تھا کہ ملک کے سب سے بڑے صوبے بلوچستان میں سیاسی مفاہمت کی ضرورت ہے۔کراچی آپریشن ہم نے شروع کیاجس کے نتیجے میں لیاری سے گینگ وارکاخاتمہ ممکن ہوا اور امن قائم ہوا۔انہوں نے مزید کہا کہ انسداددہشت گردی قوانین کی آڑمیں سیاسی مقدمات کے نتائج خطرناک ہونگے۔

مزید :

علاقائی -