سعودی حکومت نے حج 2016ء کیلئے پرائیویٹ سکیم کا کوٹہ بڑھانے کی تجویز دیدی

سعودی حکومت نے حج 2016ء کیلئے پرائیویٹ سکیم کا کوٹہ بڑھانے کی تجویز دیدی

  

 لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) سعودی حکومت نے حج 2016 کے لئے پرائیویٹ حج سکیم کا حج کوٹہ بڑھانے کی تجویز دے دی وفاقی سیکرٹری مذہبی اورحج 2016 کے لئے 60فیصد سرکاری سکیم اور40فیصد پرائیویٹ سکیم کرنے پربضد، وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف پی آئی اے سمیت تمام اداروں کی نج کاری کے فیصلے پر عمل درآمد کے لئے کوشاں ہیں، وزارت مذہبی امور حکومت پاکستان کی نج کاری پالیسی کے برعکس سرکاری حج کوٹہ بڑھانے کے لئے کوشاں، حج آرگنائزر کی طرف سے دوہرے معیار پر اظہار تشویش ،معلوم ہوا ہے سعودی حکومت گزشتہ سال کے پاکستان سے جانے والے آدھے سرکاری اورآدھے پرائیویٹ سکیم کے حجاج کے تناسب کو برقرار رکھنے کی بجائے پرائیویٹ سکیم کا کوٹہ 10فیصد بڑھانا چاہتی ہے وفاقی سیکرٹری مذہبی امور پاکستان اورسعودیہ کے درمیان 18فرور ی کو ہونے والے ایم اوریو کے لئے سفارشات تیار کر رہے ہیں اس میں انہوں نے سعودی پالیسی اوروزیر اعظم پاکستان کی پالیسی کے برعکس پرائیویٹ حج سکیم کا حج کوٹہ 10فیصد کم کرنے اورسرکاری سکیم کاحج کوٹہ10فیصد بڑھانے کی تجویز رکھی ہے، سعودی حکومت نے2005 سے پرائیویٹ سکیم کا آغاز کرتے ہوئے دنیا بھر سے آنے والے عازمین حج کے نظام کو مرحلہ وار پرائیویٹ کرنے کی ہدایات جاری کی تھیں 2006 سے مرحلہ وارسعودی حکومت کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے حج 2015میں آدھے سرکاری اورآدھے پرائیویٹ عازمین گئے تھے سعودی حکومت کی ہدایات اورتعلیمات کے مطابق حج 2016 میں 60 فیصد پرائیویٹ اور40فیصد سرکاری ہونا چاہئے مگر وزارت مذہبی امور سعودی اورپاکستان حکومت کی پالیسی کے خلاف پرائیویٹ سکیم کاحج کوٹہ 10فیصد کم کرنے کا ارادہ رکھتی ہے ملک بھر کے حج آرگنائزر میں وزارت کی تجویز پر شدید اضطراب پایا جارہاہے حج آرگنائزر نے وزیر اعظم پاکستان سے مداخلت کی درخواست کی ہے۔

مزید :

علاقائی -