دو سیاسی گروپوں کے تصادم میں زخمی ہونیوالا دوسرا طالب علم بھی دم توڑ گیا ،لواحقین کا شدید احتجاج

دو سیاسی گروپوں کے تصادم میں زخمی ہونیوالا دوسرا طالب علم بھی دم توڑ گیا ...

  

لاہور (خبر نگا ر ) سمن آ باد میں دو سیاسی گروپوں کے تصادم کی زد میں آکر زخمی ہونے والا 13سالہ نوجو ان بہادر بھی دم توڑ گیا ۔لواحقین نے ملزما ن کی عد م گرفتا ر ی پر قر طبہ چو ک میں احتجا ج کیاجس سے گا ڑیو ں کی لمبی قطا ر یں لگ گئیں بعدازا ں ایس پی سی آ ئی اے عمر ور ک نے مظا ہر ین کومر کزی ملزمان کی 24گھنٹے میں گرفتا ر کر نے کی یقین د ہا نی کرائی جس پر احتجا ج ختم کردیا گیا ۔ پو لیس نے نعش پو سٹ ما رٹم کیلئے مردہ خا نہ میں منتقل کردی ہے ۔ واضح ر ہے گزشتہ جمعہ کے روز ہونے والی فائرنگ سے بہادر کا بڑا بھائی موقع پر ہی دم توڑ گیا تھا جبکہ تین افراد زخمی ہوئے تھے۔تفصیلا ت کے مطا بق گزشتہ جمعہ کی شام یو سی اسی سے آزاد منتخب چیئرمین چوہدری سلیم اور اس کے سیاسی مخالف وقار گجر کے مابین تصادم ہوا اور فائرنگ کی زد میں محلے دار دو کم سن بھائیوں سمیت پانچ افراد زخمی ہوئے تھے۔چودہ سالہ صفدر فائرنگ کے باعث موقع پر جبکہ اس کا چھوٹا بھائی بہادر چار روز سروسز ہسپتا ل میں زیر علاج رہنے کے بعد گزشتہ روز دم توڑ گیا ۔ بہا در کی مو ت کے بعد لو احقین نے قر طبہ چو ک میں نعش ر کھ کر ملزما ن کی عد م گرفتا ر ی پر 4گھنٹے تک احتجا ج کیا جس سے گا ڑیو ں کی لمبی قطا ر یں لگ گئیں، ایمبولینس بھی ٹر یفک میں پھنسی ر ہی ۔ بعدازا ں ایس پی سی آ ئی اے عمر ور ک نے مظا ہر ین کو مر کزی ملزما ن کی گرفتا ر ی کی یقین د ہا نی د لا ئی جس پر مظا ہر ین نے احتجا ج ختم کردیا ۔ مقتو لین کے چچا اور والد کے مطابق محلے میں فائرنگ اور غنڈہ گردی کے خلاف تین روز قبل احتجاج میں سی سی پی او نے تین روز کے اندر تمام ملزمان گرفتار کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی، ابھی پہلے بیٹے کاجنا زہ اٹھا تھا کہ دوسرے بیٹے کی مو ت واقع ہو گئی ہے اور پولیس اب تک کسی نامزد ملزم کو گرفتار نہیں کر سکی، انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سے ملزمان کی گرفتاری کی اپیل کی ہے ۔۔ دوسری طرف پولیس کا کہنا ہے کے متعدد افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے اور مرکزی ملزم بھی جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے۔

مزید :

علاقائی -