حکومت پٹرول پر 25روپے فی لیٹر کما رہی ہے،شاہد خاقان عباسی

حکومت پٹرول پر 25روپے فی لیٹر کما رہی ہے،شاہد خاقان عباسی

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر برائے پٹرولنگ شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پی آئی نے اے ایک سال میں جتنے پیسوں کا نقصان کیا اتنے پیسوں میں موٹر وے بن سکتی ہے ، حکومت پٹرول کی مد میں 25روپے فی لیٹر کما رہی ہے، پی آئی اے فلائٹ آپریشن بحال اور ہڑتال ختم ہونے سے پی آئی اے کی نجکاری کا عمل ختم نہیں ہو گا۔نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور قطر کے درمیان ایل این جی درآمد سے متعلق معاہدے پر دستخط بدھ کو ہوں گے جس کے بعد ایل این جی اور گیس کی قیمتوں میں کمی ہو گی۔ شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت پی آئی اے میں بنیادی تبدیلی کی ،نئے جہازوں کو لے کر آئے لیکن اس کے باوجود خسارہ کم نہیں ہوا، موجودہ وقت میں تیل کی قیمتیں کم ہیں اس لئے پی آئی اے کا خسارہ فی الحال کم ہے۔انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کے مسئلے کا حل یہ ہے کہ اس میں پرائیویٹ مینجمنٹ کو شامل کیا جائے ، پی آئی اے کے اثاثے بہت کم ہیں ،اس کے اثاثے کم از کم تین ارب ڈالر ہونے چاہیے۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور قطر کے درمیان ایل این جی معاہدے سے توانائی بحران کوفوری طورپرمدددینے کیلئے پاکستان اورقطرکے درمیان پہلے سال میں ہی ایک ارب ڈالرکی ایل این جی درآمدکریں گے،150ارب روپے سے گیس کی پائپ لائنیں بچھائیں گے ،یہ دونوں ممالک کے درمیان 2031ء4 تک کامعاہدہ ہے ،ہر 10سال بعداس معاہدے کاجائزہ لیاجائیگا۔وفاقی وزیرپٹرولیم نے کہاکہ حکومت نے جولائی2013ء4 میں ایل این جی کی درآمدبارے مذاکرات کی اجازت دی تھی ،ایل این جی کی درآمدسے سب سے پہلے بندپاورپلانٹ کوگیس فراہم کی جائے گی ایل این جی سے فرئٹلائزرکی درآمدختم کریں گے اگلے مرحلے میں سی این جی کوگیس فراہم کریں گے۔انہوں نے کہاکہ قطرکے ساتھ اسی طرح کے مزیدچارمعاہدے کرنے ہوں گے ،ملک میں توانائی کے بحران پرقابوپانے کیلئے کم ترین راستہ ایل این جی کی درآمدہے۔

مزید :

صفحہ اول -