8دن بعد پی آئی اے ملازمین کی ہڑتال ختم: فلائٹ آپریشن مکمل بحال

8دن بعد پی آئی اے ملازمین کی ہڑتال ختم: فلائٹ آپریشن مکمل بحال

  

لاہور،کراچی( سپیشل رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک) پی آئی اے ایکشن کمیٹی نے اپنااحتجاج ختم کرتے ہوئے فلائٹ آپریشن کو فوری طور پر شروع کرنے کا اعلان کر دیا ۔جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیئرمین سہیل بلوچ نے احتجاج ختم کرنے کا اعلان کراچی میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں کافی لوگوں سے ضمات مل چکی ہے جبکہ باقی باتوں کو طے کرنے کیلئے ہم وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کریں گے اس لئے اب فلائٹ آپریشن کو معطل کرنے کا کوئی جواز نہیں۔انہوں نے کہا کہ میں تمام ملازمین کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ہمارے ساتھ تعاون کیا لیکن اگر کوئی شخص فلائٹ آپریشن میں رکاوٹ ڈالے یا ملازمین کو ہراساں کرے تو اس کی اطلاع ایکشن کمیٹی کو دی جائے۔انہوں نے انکشاف کیا کہ ایک اچھے دوست کی وجہ سے معاملات سلجھے مگرہمارے ساتھیوں کی قربانی رائیگاں نہیں جائیں گی اور ان کے خون کا حساب لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پی آئی اے ترقی کر سکتی ہے مگر اسے سپورٹ اور رہنمائی کی ضرورت ہے۔ واضح رہے گزشتہ 8 روز سے پی آئی اے کی نجکاری کے خلاف ملازمین نے احتجاج کر رکھا تھا اور احتجاج کے باعث پی آئی اے کو پونے تین ارب روپے کا نقصان ہوا۔ ملازمین کے احتجاج کی وجہ سے پی ا?ئی اے کا فلائٹ آپریشن بری طرح متاثر رہا اور مسافروں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ سہیل بلوچ نے کہا کہ مسائل کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کے ساتھ ساتھ فلائٹ آپریشن بھی جاری رہے گا۔ سہیل بلوچ نے کہا کہ جاں بحق ہونے والے پی آئی اے کے ملازمین کی ایف آئی آر ا لواحقین کی مرضی کے مطابق درج کروائی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق جوائنٹ ایکشن کمیٹی اور حکومت کے درمیان معاملات حل کروانے میں 4شخصیات نے اہم کردار ادا کیا، جن میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، کیپٹن(ر) صفدر اور چوہدری جاوید شامل ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -