فیڈرل پلانٹ پروٹیکشن حکا م کی سستی ، ملتان ائیر پورٹ پرکورنٹائن کادفتر قائم نہ ہوسکا

فیڈرل پلانٹ پروٹیکشن حکا م کی سستی ، ملتان ائیر پورٹ پرکورنٹائن کادفتر قائم ...

  

ملتان(خبر نگا ر ) وفاقی وزارت برائے نیشنل فوڈ سیکورٹی اینڈ ریسرچ کے ذیلی شعبہ فیڈرل پلانٹ پروٹیکشن کے حکام کی رواتی سستی اور (بقیہ نمبر28صفحہ12پر )

بے توجہی کایہ عالم ہے کہ ملتان کاانٹرنیشنل ائیر پورٹ تعمیر ہوئے ڈھائی سال کاعرصہ مکمل ہوگیاہے ابھی تک اس میں کورنٹائن کادفتر قائم نہیں کیا جاسکا ہے کہ جس کی وجہ سے جنوبی پنجاب کے ۴۱ اضلاع کی زرعی اجناس کی ایکسپورٹ اور امپورٹ ابھی تک کراچی ،لاہور اور اسلام آباد سے کی جارہی ہے جس کی وجہ سے زرعی اجناس کاحب ملتان میں کے ایکسپورٹر ز اور امپورٹرز اور پروگریسو گرورز کوبھی کافی مشکلات کاسامنا کرنا پڑرہا ہے گزشتہ دو برسوں سے ملتان انٹرنیشنل ائیراپریشنل ہوچکا ہے جہاں سے انٹرنیشنل ائیر لائنز کی پروازیں آجارہی ہیں لیکن کورنٹائن کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے زرعی اجناس کی ایکسپورٹ ملتان سے شروع نہیں کی جاسکی ہے فیڈرل پلانٹ پروٹیکشن کے اعلی حکام کی روایتی سستی اور موجودہ حکمرانوں کی عدم دلچسپی کے باعث مزکورہ شعبہ قائم نہیں کیا جارہاہے ملتان سے تازہ سبزیاں پھل میں آم ،انگور ،انار ،کینوں ،کھجور ،امردو کے علاوہ گوشت ،انڈے ،چاول سمیت دیگر زرعی اجناس کی بڑی مقدار میں ایکسپورٹ کی جاسکتی ہے مگر سہولیات کاشدید فقدان کے باعث مزکورہ شعبہ قائم نہیں کیاجارہا ہے اس سلسلے میں پلانٹ پروٹیکشن ملتان کے افسران کاکہنا ہے کہ آئندہ مینگو سیزن سے پہلے کورنٹائن کاشعبہ قائم کردیا جائے گا ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -