اورنج لائن ٹرین منصوبہ، عدالتی حکم امتناعی کے باوجود کام جاری،توہین عدالت کی درخواست دائر

اورنج لائن ٹرین منصوبہ، عدالتی حکم امتناعی کے باوجود کام جاری،توہین عدالت ...
اورنج لائن ٹرین منصوبہ، عدالتی حکم امتناعی کے باوجود کام جاری،توہین عدالت کی درخواست دائر

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)تاریخی عمارتوں کے اطراف میں 200فٹ تک اورنج لائن ٹرین منصوبے پر کام روکنے سے متعلق عدالتی حکم امتناعی کے باوجود تعمیراتی کام جاری رکھنے پرمتعلقہ حکام کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں توہین عدالت کی درخواست دائر کردی گئی۔مقامی شہریوں کامل خان ممتاز اور نیلم حسین کی طرف سے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی وساطت سے دائر درخواست میں ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ،چیف انجینئرایل ڈی اے اسرار سعید، منصوبے کے پیٹرن انچیف خواجہ احمدحسان،ڈی جی ادارہ تحفظ ماحولیات ڈاکٹر جاوید اقبال اور ڈی جی آرکیالوجی چودھری محمد اعجاز کو فریق بنایا گیا ہے۔توہین عدالت کی درخواست میں بتایا گیا کہ 28 جنوری کو حکم امتناعی جاری کرکے 11 تاریخی عمارتوں کی 200 فٹ کی حدود میں تعمیراتی کام سے روکا گیا تھا لیکن ہائیکورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تعمیراتی کام جاری ہے۔ درخواست گزار کے وکیل اظہر صدیق نے الزام لگایا کہ حکومت نے عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کو اپنا وطیرہ بنا لیا ہے اور ترقی کے نامور پر آثارقدیمہ کی تباہی، حکومت ترجیحات پر ایک سوالیہ نشان ہے۔درخواست میں استدعا کی گئی کہ ہائیکورٹ کے احکامات کے باوجود تعمیراتی کام نہ روکنے پر توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔

مزید :

لاہور -