ڈاکٹرز کے جائزمطالبات پہلے بھی منظور کیے آئندہ بھی کریں گے ،آئے روز ہڑتال کسی مسلئے کا حل نہیں، حکومت کو کمزور نہ سمجھا جائے:شہرام خان ترکئی

ڈاکٹرز کے جائزمطالبات پہلے بھی منظور کیے آئندہ بھی کریں گے ،آئے روز ہڑتال ...
ڈاکٹرز کے جائزمطالبات پہلے بھی منظور کیے آئندہ بھی کریں گے ،آئے روز ہڑتال کسی مسلئے کا حل نہیں، حکومت کو کمزور نہ سمجھا جائے:شہرام خان ترکئی

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)خیبر پختونخواہ کے وزیر صحت شہرام خان ترکئی نے کہاصو با ئی حکو مت ڈاکٹروں سمیت ہیلتھ سروس سے جڑے تمام ملازمین کے جائزمطالبات پہلے بھی منظور کیے ہیں اور آئندبھی کر ے گی ، آئے روز ہڑتال کسی مسلئے کا حل نہیں، حکومت کو کمزور نہ سمجھا جائے۔

میڈیکل ٹیچنگ انسٹیٹیوشن ریفامز ایکٹ ڈاکٹرز اور دیگر اسٹیک ہولڈر سے سے طویل مشاورت کے بعد تیار کیا گیا ہے ، جبکہ صوبائی اسمبلی نے اس قانون کو متفقہ طور پر منظور کیا،  دوسری طرف لازمی خدمات کا قانون پشاور ہائی کوٹ کی ہدایت کی روشنی میں نافذکیا گیا ہے اور عدالت کے احکامات پر عملدرآمدصو با ئی حکو مت اور ڈاکٹروں دونوں پر یکساں طور پر لازم ہے ، جو بھی اس پر عملدارمد کی راہ میں رکاوٹ ڈالے گا وہ قانون کی خلاف ورزی کے ساتھ ساتھ توہین عدالت کا بھی مرتکب ہوگا ۔

مختلف ٹی وی چینلز کو الگ الگ انٹرویوز دےتے ہو ئے انھوں نے کہا صو با ئی حکو مت عوام سے کیے گے تمام وعدوں کے عےن مطابق ہسپتالوںکے نظام کو بہتر بنانے اور انھیں مالی و انتظامی خودمختاری دیکر ان طبی اداروں میں غریب عوام کے لیے علاج و معالجے کے معیاری سہولیات کی فراہمی کو ےقینی بناناچاہتی ہے اورہسپتالوں کے 95 فیصد سے زیادہ ملازمین اس کی حماےت کر رہے ہےں مگر چند مٹھی بھر عناصر اپنی ذاتی مفادات اور پرائیوےٹ کاروبار چمکانے کے لےے اس کی مخالفت کر رہے ہےں جو قانون کی کھلم کھلا خلاف ورزی اور عدالتی احکامات کی حکم عدولی ہے اور حکو مت ایسے عناصر سے قانون کے مطابق نمٹے گی۔ بعض سیاسی عناصر کی طرف سے ہسپتالوں کے احتجاجی ملازمیں کے ساتھ اظہار ےکجہتی کے نام پر ان کو احتجاج اور حکو مت کے خلاف اکسا نے کی بھرپور مذمت کر تے ہوئے شہرام خان ترکئی نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے متفقہ طور پر ریفامز اےکٹ اسمبلی سے منظور کر وایا اب وہ ہی اس قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کا ساتھ دے رہے ہےں جو ان کی سیاسی کمزوری اور منافقت کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔

مزید :

پشاور -