پاکستان جلد دنیا کی بڑی 20معیچتوں میں شامل ہو گا : وزیر اعظم

پاکستان جلد دنیا کی بڑی 20معیچتوں میں شامل ہو گا : وزیر اعظم

 اسلام آباد(اے این این) وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کی معیشت تیزی سے ترقی کررہی ہے پاکستان 2025میں دنیا کی 20بڑی معیشتوں میں شامل ہو گا،ہم نے جب حکومت سنبھالی تو حالات ابتر تھے ،چیلنج سمجھ کر مسائل کو حل کیا، رواں سال ترقی کی شرح 5.5 تک لے گئے،توانائی بحران پر کافی حد تک قابو پا لیا ہے ،غیرملکی سرمایہ کاروں کیلیے خصوصی صنعتی زون قائم کررہے ہیں،صنعتی شعبے کی کارکردگی میں نمایاں بہتری آئی اورملک میں غربت میں کمی اور متوسط طبقے کی آمدنی میں اضافہ ہوا۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلام آباد میں 14ممالک کی 38نامور کمپنیوں کے سربراہان سے خطاب میں کیا۔اجلاس میں اٹلی،سنگا پور،برطانیہ،جنوبی کوریا،آسٹریلیا،سویڈن اورچین کے نمائندے سمیت 14 ملکوں کی نامورکمپنیوں کے38 ایگزیکٹوزشریک ہوئے۔اجلاس میں وزیر خزانہ اسحق ڈار سمیت اعلیٰ حکام نے بھی شرکت کی ۔اجلاس سے خطاب میں نواز شریف نے غیر ملکی کمپنیوں کے چیف ایگزیکٹو کے دورے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ،آپ کا دورہ پاکستان سرمایہ کاری اور تجارت کے نئے مواقع فراہم کرے گا۔وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ پرائس واٹر ہاس کوپرس نے اپنی رپورٹ میں پاکستان کو 2030 کی دنیا کی 32 بڑی معیشتوں میں جگہ دی ہے دیگر عالمی ادارے بھی بہتر پاکستانی معیشت کا اعتراف کر رہے ہیں اور ہماری درجہ بندی میں مسلسل بہتری آ رہی ہے ۔ ہمارا وژن 2025 کے تحت پاکستان کو دنیا کی 25 ویں بڑی معیشت بنانے کا منصوبہ ہے، حکومت اپنے منصوبے کو مکمل کرنے کے لیے غیر ملکی سرمایہ کاروں کی توجہ حاصل کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ انہوں نے 2013 میں حکومت سنبھالی تو ملک کی معاشی حالت ابتر تھی، انہوں نے چیلنج کو قبول کرتے ہوئے مسائل کو حل کیا، اب پاکستان کی معیشت تیزی سے ترقی کررہی ہے ، اقتصادی حالات بہتری کی جانب گامزن ہیں۔انھوں نے کہا کہ ملک میں غیرملکی سرمایہ کاروں کیلیے خصوصی صنعتی زون قائم کررہے ہیں۔حکومت بیرونی سرمایہ کاری لانے کے لئے پرعزم ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں ترقی کے لئے اصلاحات کر رہے ہیں، رواں سال ترقی کی شرح 5.5 تک لے گئے ،خسارہ کم ہوکر صرف 4.2 فیصد رہ گیا، پہلے یہی خسارہ 8.6 فیصد زائد تھا،ہم مزید موثر اقدامات اٹھا رہے ہیں ۔وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ صنعتی شعبے کی کارکردگی میں نمایاں بہتری آئی اورملک میں غربت میں کمی اور متوسط طبقے کی آمدنی میں اضافہ ہوا۔وزیر اعظم نے بتایا کہ 2018 سے 2025 کے درمیان معیشت میں 8 فیصد بہتری لاکر مہنگائی کی شرح 0 فیصد پر لے کر آنے کا منصوبہ ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان اسٹاک ایکسچینج نے پہلی بار50 ہزار کی حد عبور کی ہے،ملک میں صارفین کی قوت خریداری میں اضافہ ہورہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ حکومت نے گزشتہ 3 سال کے دوران ٹیکس وصولیوں میں اضافہ کیا، اور ٹیکس وصولیوں کی مجموعی پیداوار جو پہلے 9.8فیصد تھی بڑھ کر 12.4 فیصد تک پہنچ گئی۔وزیر اعظم نے کہا کہ حکومتی پالیسیوں کے باعث آج پاکستان کی معیشت ترقی کی جانب گامزن ہے، صنعتی شعبے نے نمایاں کامیابیاں حاصل کرتے ہوئے سال 2016-2015 کے دوران اپنی معیشت میں 6.8 فیصد اضافہ کیا، جب کہ رواں برس اس میں مزید بہتری کی امید ہے۔وزیر اعظم کے مطابق پاکستان میں مختلف شعبوں کے اندر بیرونی سرمایہ کاری کے بڑے مواقع موجود ہیں، جب کہ پاکستان یورپ اور امریکی منڈیوں میں ابھرتی ہوئی معیشت کے طور پر سامنے آ رہا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول