ناقابل یقین کام ہوگیا، تھر انتظامیہ نے قطری شہزادے کو بغیر شکار واپس بھیج دیا

ناقابل یقین کام ہوگیا، تھر انتظامیہ نے قطری شہزادے کو بغیر شکار واپس بھیج دیا
ناقابل یقین کام ہوگیا، تھر انتظامیہ نے قطری شہزادے کو بغیر شکار واپس بھیج دیا

  


تھرپارکر (ویب ڈیسک)تھر انتظامیہ نے شکار کے لئے آئے ہوئے قطری شہزادے کو بغیر شکار واپس روانہ کر دیا،صرف یہی نہیں بلکہ ڈیپلو کے قریب تلور کے شکار کے لئے قائم کیمپ ختم کر دیاگیا۔

 وفاقی حکومت نے ایک ہفتہ قبل قطری شہزادے فہد بن عبدالرحمان کو تھر وزٹ کے لئے اجازت نامہ جاری کیا تھا جس کی میعاد 5فروری سے 28فروری تک تھی مگر محکمہ جنگلی حیات انتظامیہ تھرپارکر کے مطابق اس اجازت نامہ میں شکار کا ذکر نہیں تھا صرف وزٹ کی اجازت تھی۔ تاہم قطری شہزادے نے ڈیپلو تعلقہ کی سائٹ پر گاﺅں جت ترائی کے قریب شکار کے لئے کیمپ قائم کر دیا تھا اور شکار کے لئے عقاب سمیت تمام ساز و سامان لایا گیا تھا۔ ہ قریبی گاﺅں کی آبادی نے شدید اعتراضات کرتے ہوئے وائلڈلائف انتظامیہ کو شکایت کی جس پر وائلڈ لائف کے گیم وارڈن تلوک چند نے اہلکاروں کو مقرر کر دیا  جنہوں نے قطری شہزادے اور اس کے ساتھیوں شکار کرنے سے روکدیا۔

پی ایس ایل میچز انٹرنیٹ پر دیکھنے کے خواہشمندوں کو کوئٹہ گلیڈی ایٹرزاور ٹیپ میڈ ٹی وی نے انتہائی شاندار خوشخبری سنا دی ،بہترین سروس متعارف کروا دی

روزنامہ جنگ کے مطابق  قطری شہزادے سے بات چیت کے بعد انہیں بتایا گیا کہ آپ کے پاس موجود اجازت نامہ میں شکار کا ذکر نہیں ،اس لئے آپ شکار نہیں کر سکتے ۔جس کے بعد قطری شہزادہ فہد بن عبدالرحمان واپس روانہ ہو گیاجبکہ قائم کیمپ کو اکھاڑ دیا گیا۔

محکمہ جنگلی حیات کے ضلعی گیم آفیسر اشفاق میمن نے بتایا کہ جیسے ہی ہمیں قطری شہزادی کی شکاری کیمپ کی اطلاع ملی تو ہم نے ان سے تحریری اجازت طلب کی۔جس میں صرف تھر وزٹ درج تھا مگر شکار کا اجازت نامہ نہیں تھا۔اور متعلقہ محکمہ یعنی ہم بھی بے خبر تھے۔ اس لئے ہم نے آئے ہوئے مہمان کو تعظیم کے ساتھ واپس رخصت کر دیا کیونکہ شکار کے لئے محکمہ جنگلی حیات کی تحریری اجازت لازمی ہوتی ہے۔جو ان کے پاس نہیں تھی۔

مزید : تھرپارکر