سعودی خواتین کو دوسری شادی پر بھی بچے کی تحویل کا حق مل گیا

سعودی خواتین کو دوسری شادی پر بھی بچے کی تحویل کا حق مل گیا
سعودی خواتین کو دوسری شادی پر بھی بچے کی تحویل کا حق مل گیا

  


الریاض(این این آئی)سعودی خواتین کو دوسری شادی کے بعد بھی بچے یا بچوں کو اپنی تحویل میں رکھنے کا حق حاصل ہوگیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی خواتین کو یہ حق دلانے میں مملکت کی قومی سوسائٹی برائے انسانی حقوق نے اہم کردار ادا کیا ہے۔اس سوسائٹی کی ایک رکن ڈاکٹر سہیلہ زین العابدین نے بتایا کہ گذشتہ سال کے دوران میں انھوں نے بہت سی مطلقہ مائوں کو ان کے بچوں کی تحویل کا حق دلایا تھا۔ان میں سے بعض خواتین کو دوسری شادی کے بعد بھی یہ حق حاصل ہوگیا تھا۔

TapMad نے ہمہ وقت سرگرم رہنے والوں کے لئے انٹرٹینمنٹ کی نئی دنیا متعارف کروادی،کلک کریں

ڈاکٹر سہیلہ کا کہنا تھا کہ ہم ہمیشہ خاندانی تنازعات کو باہمی افہام وتفہیم کے ذریعے طے کرنے کی کوشش کرتے ہیں ۔خاص طور پر نان ونفقے ،بچوں کی تحویل یا خواتین کو شادی سے روکنے سے متعلق کیسوں کو متعلقہ فریقوں کی باہمی رضا مندی کے ذریعے طے کرنے کی کوششوں کی جاتی ہے اور بہت سے تنازعات متعلقہ حکام کی مدد سے پرامن طور پر ہی طے کر لیے جاتے ہیں۔انھوں نے بچوں کی تحویل کے مقدمات کے خواتین کے حق میں فیصلوں پر ججوں کی تعریف کی اور کہا کہ بچے عام طور پر اپنی ماو¿ں کے ساتھ ہی رہنا چاہتے ہیں۔

مزید : عرب دنیا