پرنسپل پی جی ایم آئی کی تقرری و کرپشن کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ

پرنسپل پی جی ایم آئی کی تقرری و کرپشن کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے یا نہ ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ کی تقرری اورمبینہ کرپشن کے خلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کر لیا۔جسٹس عائشہ اے ملک نے کیس کی سماعت کی،درخواست گزارحافظ معین الدین نے عدالت میں موقف اختیا رکیا کہ پروفیسرڈاکٹرغیاث النبی کو میرٹ کے برعکس عہدے پر تعینات کیا گیا ہے،پروفیسر غیاث النبی حکومتی پالیسی کے برعکس نجی ہسپتال میں غیر قانونی طور پرپرائیویٹ پریکٹس کر رہے ہیں،انہوں نے اپنے محکمے سے این او سی حاصل کئے بغیر درجنوں غیرملکی دورے کئے، آج تک انکم ٹیکس ریٹرن ادانہیں کیا، جبکہ جنرل ہسپتال کے مختلف وارڈز کی تعمیر میں مالی بدعنوانیاں کیں، انہوں نے استدعا کی کہ عدالت پروفیسر غیاث النبی کو پرنسپل کے عہدے سے ہٹانے کا حکم دے اور غیر قانونی اقدامات کرنے پران کے خلاف محکمانہ کاروائی کے احکامات صادر کرے جس پر عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کر لیا۔

مزید :

علاقائی -