ہائیکورٹ رولز کمیٹی کی ضابطہ دیوانی 1908ء کے رولز میں ترامیم کی منظوری

ہائیکورٹ رولز کمیٹی کی ضابطہ دیوانی 1908ء کے رولز میں ترامیم کی منظوری

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کی رولز کمیٹی نے دیوانی مقدمات کے جلد فیصلوں کے لئے قانونی موشگافیوں کے خاتمہ اور مختلف مراحل میں کمی کے لئے ضابطہ دیوانی 1908ء کے رولز میں ترامیم کی منظوری دے دی ۔کمیٹی نے عدالت عالیہ کے 8ججوں کی تجاویز کو زیر غور لانے کے بعد ضابطہ دیوانی 1908ء کے رولز میں ترامیم کے حوالے سے مسودہ کی منظوری دی ۔جسٹس امین الدین خان، جسٹس شاہد کریم، جسٹس شمس محمود مرزا، اور قانون دان میاں ظفراقبال کلانوری پرمشتمل رولز کمیٹی کا اجلاس لاہور ہائیکورٹ میں منعقد ہوا، رولز کمیٹی کے ممبر میاں ظفر اقبال کلانوری نے اجلاس کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ ضابطہ دیوانی 1908ء کے رولز میں ترامیم کا بغور جائزہ لیا گیا،انہوں نے بتایا کہ نئے مسودے میں دیوانی مقدمات کا ٹرائل کسی تعطل کے بغیر روزانہ کی بنیاد پر کیاجائے گا، عدالتیں ٹرائل مکمل ہونے کے بعد7یوم میں فیصلہ سنانے کی پابند ہوں گی، دیوانی مقدمہ دائر ہونے کے بعد ٹرائل شروع ہونے سے قبل فریقین کو مصالحت کا ایک موقع فراہم کرتے ہوئے مقدمہ مصالحتی عدالت کو بھجوایا جائے گا، رولز کمیٹی کی جانب سے منظور کئے جانے والے مسودہ قانون کو حتمی منظوری کے لئے فل کورٹ بھیجا جا رہا ہے۔

ضابطہ دیوانی

مزید :

علاقائی -