پا ک امریکہ قریبی تعاون کے بغیر تنازع ناممکن : احسن اقبال

پا ک امریکہ قریبی تعاون کے بغیر تنازع ناممکن : احسن اقبال

  

واشنگٹن(آئی این پی،آن لائن ) وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ پاکستان میں سکیورٹی آپریشن کیلئے کسی سے بھیک نہیں مانگی ، پاکستان اورامریکہ کے درمیان قریبی تعاون کے بغیرافغان تنازعہ کاحل ناممکن ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے واشنگٹن میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ وزیرداخلہ نے کہا کہ پاکستان اورامریکہ بہت سے معاملات میں مل کرکام کرسکتے ہیں اور اس سلسلے میں دونوں ممالک کے درمیان جلد سٹرکچرڈ ڈائیلاگ کا آغاز ہوگا کیونکہ باہمی احترام کی بنیاد پر تعاون بڑھانا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یکطرفہ طور پر امریکا کے سکیورٹی خدشات دور نہیں کیے جاسکتے جبکہ ایک دوسرے سے جنگ میں نہیں بلکہ ترقی میں مقابلہ کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارت افغانستان میں دہشت گردی کررہا ہے جبکہ پاکستان کو داخلی سطح پر کمزور کرنے کی کوششیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔وزیر داخلہ نے کہا نواز شریف سے متعلق فیصلے سے سپریم کورٹ کا وقار متنازع ہوا۔انہوں نے کہا کہ سی پیک کوکامیابی سے آگے لے جارہے ہیں،بھارتی حکومت کوسی پیک کی مخالفت پرتنقید کا بھی سامنا ہے حالانکہ سی پیک سے بھارت کوبھی فائدہ ہوگا۔ احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان کودباؤمیں لانے کی پالیسی کامیاب نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ خطے کے بعض ممالک پاک امریکا تعلقات خراب کرنا چاہتے ہیں، بھارت افغانستان میں دہشتگردی کررہا ہے، افغانستان اور پاکستان ایک دوسرے سے وابستہ ہیں اوررہیں گے، افغانستان کا امن ہمارے لیے اہم ہے اور امریکا بھی ہمارے لیے اہم ہے اور ہم مل کرافغانستان میں اہم کردارادا کرسکتے ہیں۔احسن اقبال نے مزید کہ امریکا دنیا بھرکی ٹیکنالوجی کا لیڈرہے، پاکستان کی علاقائی خود مختاری کا احترام کیا جانا چاہیے، ہمسایہ ممالک سے برابری کی بنیاد پراچھے تعلقات چاہتے ہیں، تشدد ترقی کا دشمن ہے اور ہم اسے ختم کرنا چاہتے ہیں۔احسن اقبال نے کہا کہ دہشتگرد اچھا یا برا نہیں، دہشتگرد تو دہشتگرد ہے اوردہشتگرد سب کے دشمن ہیں ، عالمی برادری مل کرمقابلہ کرے، دہشتگردوں کے خلاف معلومات دیں پھر ہم کارروائی کریں گے۔

احسن اقبال

مزید :

صفحہ اول -