حسین حقانی کی واپسی کیلئے کیا اقدامات کئے ؟ ریکارڈ دکھایا جائے : سپریم کورٹ

حسین حقانی کی واپسی کیلئے کیا اقدامات کئے ؟ ریکارڈ دکھایا جائے : سپریم کورٹ

  

اسلام آباد (صباح نیوز)سپریم کورٹ میں میمو گیٹ اسکینڈل کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے حسین حقانی کی نظرثانی کی درخواست خارج کرتے ہوئے سابق سفیر کو پاکستان لانے کیلئے متعلقہ اداروں سے اقدامات پر جواب طلب کرلیا،عدالت کا کہنا ہے کہ یہ پاکستان کے وقار کا معاملہ ہے۔ سماعت ایک ہفتے کے لئے ملتوی کردی گئی۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی تو درخواست گزار نے عدالت کو بتایا کہ حسین حقانی واپس آنے کی یقین دہانی کرا کر گئے لیکن نہیں آئے۔ عدالت نے حسین حقانی کی واپسی کے لئے سیکرٹری داخلہ، ڈی جی ایف آئی اے اور سیکرٹری خارجہ کو فوری طلب کرلیا۔سیکرٹری داخلہ کی مصروفیت کے باعث ایڈیشنل سیکرٹری داخلہ عدالت میں پیش ہوئے۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ وزارت داخلہ نے حسین حقانی کی وطن واپسی کے لیے کیا قانونی اقدامات اٹھائے ہیں؟ عدالت کو ریکارڈ دکھایا جائے۔ سرکاری وکیل نے تفصیلات دینے کے لیے عدالت سے وقت مانگ لیا۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ جہاں 4 سال انتظار کیا وہاں تھوڑا وقت اور دے دیتے ہیں۔

حسین حقانی

مزید :

صفحہ اول -