قومی کشمیر کمیٹی کا کشمیر کاز کے حوالے سے کردار قابل اطمینان نہیں: مشال ملک

قومی کشمیر کمیٹی کا کشمیر کاز کے حوالے سے کردار قابل اطمینان نہیں: مشال ملک

  

مظفرآباد(صباح نیوز)جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک کی اہلیہ مشال ملک نے کہا ہے کہ قومی کشمیر کمیٹی کاکشمیرکاز کے حوالے سے کردار قابل اطمینان نہیں،کشمیر کی آزادی کیلئے ہر فرد کو اپنی ذمہ داری کا احساس کرنا چاہئے،تحریک آزادی کیلئے برسرپیکار کشمیری عوام کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، مقبوضہ کشمیر کی کشمیری قیادت کے تحریک کیلئے کردارکو فراموش نہیں کیا جاسکتا، گزشتہ روز یہاں مرکزی ایوان صحافت میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مشال ملک کا کہنا تھا کہ ہمارا بڑا دشمن انڈیا ہے،اس کا مقابلہ کرنے کیلئے مضبوط پالیسی کی ضرورت ہے، مذکرات ہوں نہ ہوں ہمیں کشمیر کاز کے لئے ہمہ وقت کام کرنا ہے،مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر مذیدموثراندازسے اجاگر کرنے کی ضرورت ہے،شملہ معاہدہ سے اب تک مذاکرات کو کوئی فائدہ نہیں ہوا،کشمیری مررہے ہیں،انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں موجود حریت قیادت کی زندگیاں اجیرن بن گئی ہیں،ان کو آئے دن قید کرلیا جاتا ہے، مقبوضہ کشمیر میں ہماری بہنیں بیٹیاں ہر دن اذیت سے گزارتی ہیں،جو بھی تحریک آزادی کے لیے آواز بلند کرنے کی کوشش کرتا ہے تو کالے قوانین کے ذریعے ان کی آواز کودبا دیا جاتا ہے۔آسیہ اندرابی کے خاوند کو 25 سال سے قید میں رکھا ہواہے اور اتنی لمبی سزائیں اپنے آپ میں ایک لمحہ فکریہ ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کے عوام پر ظلم کے پہاڑ توڑ دیے ہیں،ہر گھر میں کوئی نہ کوئی پیلٹ گن کا شکارہوتا ہے۔ہندوستانی خصوصاً بی جے پی والے جنگ کے لیے پاگل ہوچکے ہیں اور ایمبولینسز کو بھی ٹارگٹ کرتے ہیں۔لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت کی وجہ سے ہزاروں افراد دربدر ہوگئے ہیں۔اپنے ذاتی زندگی سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت نے ان کو 6 سال سے ہم سے ملنے نہیں دیا اور ان کی اپنی بیٹی سے بھی بہت کم بات ہوتی ہے۔ہم نے بہت دفعہ ان سے ملنے کی کوشش کی لیکن بھارتی حکومت کبھی ا نہیں جیل میں ڈال دیتی ہے اور کبھی ان کا پاسپورٹ ضبط کرلیا جاتا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -