سینیٹ امیدواروں کے ٹیکس کی چھان بین سرکاری دفاتر ہفتہ ، اتوار کو کھلے رہیں گے

سینیٹ امیدواروں کے ٹیکس کی چھان بین سرکاری دفاتر ہفتہ ، اتوار کو کھلے رہیں ...

  

لاہور ،کراچی ،کوئٹہ(این این آئی )سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کے ٹیکس معاملات کی چھان بین کیلئے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے ریجنل دفاتر ہفتہ اور اتوار 10اور11فروری کو بھی کھلے رہیں گے ۔بتایا گیا ہے کہ ایف بی آر کے ریجنل ٹیکس دفاتر کے افسران اور عملے کی ہفتہ اور اتوار کی معمول کی تعطیلات منسوخ کردی گئی ہیں ہے اور ریجنل ٹیکس دفاتر دونوں روز کھلے رہیں گے جس کامقصد سینیٹ انتخابات میں حصہ لینے والے امیدواروں کی جانب سے جمع کرائے جانے والے ٹیکس دستاویزات کی چھان بین ہے ۔سیکرٹری آئی آر آپریشنز نے چیف کمشنرز کو دفاتر کھلے رکھنے کا مراسلہ ارسال کر دیا ہے ۔علاوہ ازیں سندھ سے سینیٹ کی 12 نشستوں پر انتخابات کے لیے مختلف سیاسی جماعتوں کے 44 امیدواروں نے مجموعی طور پر 47 کاغذات نامزدگی جمع کرا دیئے ہیں ۔ ان میں پیپلز پارٹی کے 20 ، ایم کیو ایم فاروق ستار گروپ کے 9 ، ایم کیو ایم بہادر آباد گروپ کے 7 ، پاک سرزمین پارٹی کے 6 ، مسلم لیگ (ن) کے 2 ، پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان مسلم لیگ (فنکشنل) کے ایک ایک امیدوار نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ۔سینٹ انتخابات کے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 10 سے 12 فروری تک جاری رہے گی۔10 فروری کو پیپلز پارٹی کے امیدواروں کے کاغذات نامزدگی کی اسکروٹنی ہو گی۔11 فروری کی صبح پی ایس پی کے چھے امیدوار کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کروائیں گے۔11 فروری کو دو بجے ایم کیو ایم پاکستان فاروق ستار کو اسکروٹنی کے لئے طلب کیا گیا ہے۔ایم کیوایم بہادرآبادگروپ کے امیدواروں کی اسکروٹنی 12 فروری کوہوگی۔مسلم لیگ نواز، مسلم لیگ فنکشنل، پی ٹی آئی کے ارکان کو 11 اور 12 فروری کو طلب کیا گیا ہے۔امیدواروں کے کاغذات نامزدگی پر اعتراضات اور اپیلیں جمع کرانے کی آخری تاریخ 15 فروری ہے۔8 فروری کو امیدواروں کی نظر ثانی شدہ لسٹ آویزاں کی جائے گی۔امیدواروں کے کاغذات نامزدگی واپس لینے کی آخری تاریخ 19 فروری ہے۔سینٹ انتخابات کے لئے پولنگ سندھ اسمبلی بلڈنگ میں 3 مارچ کو ہو گی۔دریں اثنا کوئٹہ میں سینیٹ انتخابات کیلئے کاغذات نامزد گی جمع کرانے والوں کی فہرست جمعہ کو صوبائی الیکشن کمشنر کے دفتر کے باہر آویزاں کردی گئی ہیں جبکہ کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 12فروری تک جاری رہے گی بلوچستان سے سینیٹ کی 11نشستوں پر 28امیدواروں نے کاغذات نامزدگی داخل کئے ہیں۔ سینیٹ کی 11 خالی نشستوں پر انتخابات کیلئے28امیدواروں نے کاغذات نا مزدگی الیکشن کمیشن بلوچستان آفس میں جمع کروا دئیے ہیں جن میں پشتو نخواء ملی عوامی پارٹی کے چار، مسلم لیگ (ن) ،نیشنل پارٹی ،جمعیت علما ء اسلام کے تین تین ، عوامی نیشنل پارٹی کے دو ،بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے ایک ،جبکہ گیارہ آزاد امیدوار شامل ہیں۔صوبائی الیکشن کمشنر نعیم مجید جعفر کے مطابق سینیٹ انتخابات کے پہلے مر حلے کے اختتام پر گزشتہ روز کاغذات نامزدگی صوبائی الیکشن کمیشن کے دفتر میں وصول کئے گئے جن میں بلوچستان کی گیارہ خالی نشستوں 28امیدواروں نے کاغذات نا مزدگی جمع کروا دئیے ہیں سات جنرل نشستوں پر کل 15امیدواروں نے کاغذات جمع کئے جن میں مسلم لیگ (ن) کے امیر افضل خان مندو خیل،نیشنل پارٹی کے محمد اکرم بلوچ،جمعیت علما ء اسلام کے مولوی فیض محمد ،بی این پی(مینگل) کے میر ہما یوں عزیز کرد ،اے این پی کے نظام الدین کاکڑ ،پشتونخواء ملی عوامی پارٹی کے محمد یوسف کاکڑ،سردار شفیق ترین جبکہ آزاد امیدواروں محمد صادق سنجرانی ،احمد خان ،محمد عبدالقادر ،علاؤ الدین ،انوار الحق کاکڑ،کہدہ بابر،فتح محمد بلوچ،حسین اسلام ،ٹینکو کریٹ کی دو نشستوں پر کل 7امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کئے ہیں جن میں نیشنل پارٹی کے محمد طاہر بزنجو، جمعیت علماء اسلام کے کامران مر تضی ایڈوکیٹ ،اے این پی کے نظام الدین،مسلم لیگ (ن) کے نصیب اللہ بازئی ،پشتو نخواء ملی عوامی پارٹی کے ڈاکٹر مناف ترین ،اور آزاد امیدواروں محمد عبدالقاد راور حسین اسلام،جبکہ خواتین کی دو نشستوں پر چھ امیدواروں نے کا غذات نامزدگی جمع کئے جن میں نیشنل پارٹی کی طاہرہ خورشید،جمعیت علما ء اسلام کی عذرا سید، پشتو نخواء ملی عوامی پارٹی کی عابدہ عمر،مسلم لیگ (ن) کی سمینہ ممتاز اور آزاد امیدوار ثناء جمالی، شع پر وین مگسی شامل ہیں ،سینیٹ انتخابات میں تاحا ل مسلم لیگ (ق) اور پیپلز پارٹی نے کسی بھی امیدوار کو پارٹی ٹکٹ جاری نہیں کئے ۔

سینٹ

مزید :

صفحہ اول -