مردان میں ختم نبوتؐ کے زیر اہتمام مشال قتل کیس فیصلے کیخلاف احتجاجی ریلی

مردان میں ختم نبوتؐ کے زیر اہتمام مشال قتل کیس فیصلے کیخلاف احتجاجی ریلی

  

مردان ( بیورورپورٹ ) تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام مشال کیس فیصلے کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی ریلی کے شرکاء نمازجمعہ کے بعد پاکستان چوک میں جمع ہوگئے جس میں جماعت اسلامی اور جے یو آئی کے سینکڑوں کارکنوں سمیت شہریوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی ریلی بعدازاں تحفظ ختم نبوت کے ضلعی امیر قاری اکرام الحق کی قیادت میں دوران آبادچوک تک مارچ کیا شرکاء تمام راستوں پر امریکہ اور قادیوں کے خلاف اور ختم نبوت ﷺکے حق میں نعرے لگارہے تھے دوران آباد چوک پہنچنے پر ریلی نے جلسے کی شکل اختیار کرلی جس سے خطاب کرتے ہوئے قاری اکرام الحق ،جے یو آئی (ف ) کے ضلعی جنرل سیکرٹری مولاناامانت شاہ حقانی ، جماعت اسلامی کے ضلعی جنرل سیکرٹر ی غلا م رسول ،ڈپٹی جنرل سیکرٹری عماد اکبر حسان ، سعید اختر ایڈووکیٹ اوردیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مشال کیس میں سزایافتہ افراد کے کیس کو اعلیٰ عدالتوں میں چیلنج کیاجائے گا انہوں نے دھمکی دی کہ اگر رہاہونے والے افراد کے فیصلے کو صوبائی حکومت نے چیلنج کیاتو اس کی سخت جواب دیاجائے گا مقررین نے کہاکہ سزاؤں کے خلاف ہائی کورٹ میں اپیل دائر کریں گے اس موقع پر گلی باغ کے گستاخ کذاب عرفان کے کھلے عام پھانسی پر لٹکایاجائے ریلی سے مشال کیس میں رہاہونے والے یونیورسٹی ملازم اجمل مایار نے بھی خطاب کیا اورکہاکہ پولیس کی غلط تفتیش کے باعث ہم نے نو ماہ جیل میں گزارے ہیں اس کا ازالہ کون پورا کرے گا ۔

مزید :

تجزیہ -کراچی صفحہ اول -