سندھ میں بند صنعتوں کی رجسٹریش کا عمل دوبارہ شروع کردیا گیا

سندھ میں بند صنعتوں کی رجسٹریش کا عمل دوبارہ شروع کردیا گیا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وزیر صنعت و تجارت سندھ منظور حسین وسان نے کہا ہے کہ سندھ میں27سال سے بند صنعتوں کی رجسٹریشن کا عمل دوبارہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔یہ بات انہوں نے سندھ سیکریٹریٹ میں سندھ انڈسٹریز رجسٹریشن ایکٹ 2107 سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔انہوں نے کہا کہ سندھ کے صنعتکار اپنی انڈ سٹریاں محکمہ صنعت سے رجسٹریشن کروائیں گے۔سندھ کابینہ کے اجلاس میں صنعتوں کی رجسٹریشن کرنے کہ متعلق بات چیت ہوئی تھی۔انہوں نے کہا کہ سندھ بھر میں نئی لگنے والی صنعتیں صنعتکار محکمہ صنعت سے رجسٹریشن کروانے کہ پابند ہونگے۔سندھ حکومت ایک اچھا کام کرنے جارہی ہے جس پر صنعتکاروں کو ہمارا ساتھ دینا ہوگا ۔نئے ایکٹ کے تحت صنعتکار گندے پانی کو صاف کرنے کے پلانٹ لگانے کے بھی پابند ہونگے۔ کراچی،حیدرآباد،لاڑکانہ،سکھر، میرپورخاص، نوابشاہ میں قائم انڈسٹریز لوگوں کو سندھ کے ڈومیسائل پر نوکریاں دینے کے پابند ہونگی جو صنعتکار اپنی انڈسٹری رجسٹرڈ نہیں کروائے گا اس کے خلاف قانونی کارروائی ہوگی۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں قائم انڈسٹریز کو مقامی لوگوں کے لیے ہر سال نوکریاں پیدا کرنی ہوں گی ۔اب کوئی بھی انڈسٹری دیگر صوبوں کے لوگوں کو یہاں نوکری نہیں دے گی۔اجلاس میں کچھ افسران نے شکایت کی کے کچھ صنعتکار یہان کے لوگوں کو رکھنے کہ بجائے دوسرے صوبوں کہ لوگوں کو نوکریوں پر رکھتے ہیں.۔منظور وسان نے کہا کہ اگر کوئی انڈسٹری عمل نہ کرے تو اس کہ خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔سندھ حکومت سندھ کہ صنعتکاروں کے ساتھ ہے۔سندھ بھر میں دو سالوں میں صنعتی ایریاز میں اربوں کے ریکارڈ ترقیاتی کام کروائے ہیں دیگر صوبوں سے پہلے سندھ حکومت نے گندے پانی کو صاف کرنے کا کوٹری میں ٹریٹمنٹ پلانٹ لگایا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ وفاق صنعتکارون سے وعدے کرکے وفا نہیں کرتا۔سندھ میں اب کوئی انڈسٹری بند نہیں ہوگی۔ اجلاس میں چیئرمین پی اینڈ ڈی وسیم احمد،سیکرٹری صنعت عبدالرحیم سومرو،سیکریٹری محکمہ محنت عبدالرشید سولنگی سمیت دیگر افسران نے شرکت کی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -تجزیہ -راولپنڈی صفحہ آخر -کراچی صفحہ اول -