آدمی آدھے گھنٹے تک کموڈ پر بیٹھ کر موبائل پر ویڈیو گیم کھیلتا رہا تو اس کے جسم کا کونسا حصہ ہی نیچے گر پڑا؟ وہ خبر جسے پڑھ کر آپ کبھی ٹوائلٹ میں اتنی دیر نہ بیٹھیں گے

آدمی آدھے گھنٹے تک کموڈ پر بیٹھ کر موبائل پر ویڈیو گیم کھیلتا رہا تو اس کے جسم ...
آدمی آدھے گھنٹے تک کموڈ پر بیٹھ کر موبائل پر ویڈیو گیم کھیلتا رہا تو اس کے جسم کا کونسا حصہ ہی نیچے گر پڑا؟ وہ خبر جسے پڑھ کر آپ کبھی ٹوائلٹ میں اتنی دیر نہ بیٹھیں گے

  

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) آج کی نسل نے موبائل فون کو ضرورت سے زیادہ عادت بنا لیا ہے۔ اکثر تو ٹوائلٹ میں بھی اسے ساتھ لے کر جاتے ہیں اور وہاں ’ضروری کام‘ کے ساتھ ساتھ فون پر گیمز بھی کھیلتے یا سوشل میڈیا اورویڈیوز سے لطف اندوز ہوتے رہتے ہیں۔ تاہم اب چین سے ایسے ہی نوجوان کے متعلق ایسی خوفناک خبر آ گئی ہے کہ آئندہ کوئی موبائل فون اپنے ساتھ ٹوائلٹ میں لیجانے سے پہلے دس بار سوچے گا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق چین کے جنوب مشرقی صوبے گوانگ ڈونگ کے شہر ژونگ شین کا یہ نوجوان اپنے ساتھ موبائل فون ٹوائلٹ میں لے گیا اور رفع حاجت کے دوران گیم میں ایسا منہمک ہوا کہ اسے وقت گزرنے کا احساس ہی نہ رہا اور وہ 30منٹ سے زائد تک وہیں بیٹھا رہا۔ اتنی دیرٹوائلٹ میں بیٹھنے سے اس کے اندرونی حصوں پر شدید دباﺅ پڑا اور اس کی بڑی آنت کا کچھ حصہ جسم سے باہر نکل آیا۔

رپورٹ کے مطابق اس نوجوان کو جسم سے باہر لٹکتی بڑی آنت کے ساتھ سن یاٹ سین یونیورسٹی ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے بتایا کہ بڑی آنت جسم کے ساتھ جڑی ہوتی ہے، ٹوائلٹ میں زیادہ دیگر بیٹھنے سے اس نوجوان کی آنت جسم سے الگ ہو گئی اور باہر نکل آئی۔ہسپتال کے ڈاکٹر سو ڈین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”مریض کی حالت بہت تشویشناک ہے۔اس کی مقعد کی انتڑی کا آخری حصہ جسم سے الگ ہو گیا ہے۔ اسے چار سال کی عمر سے ریکٹل پرولیپس نامی عارضہ لاحق تھا۔ مریض نے اس کا علاج نہیں کروایا جس سے اس کا یہ مرض شدید ہو چکا تھا اوراس کی وجہ سے یہ انتڑی زیادہ دیر ٹوائلٹ میں بیٹھے رہنے کا دباﺅ برداشت نہیں کر سکی اور جسم سے الگ ہو کر باہر نکل آئی۔ ہم نے آپریشن کرکے جسم سے باہر نکلنے والے حصے کو کاٹ دیا ہے تاہم مریض کو مکمل صحت مند ہونے میں کافی وقت لگے گا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -