وہ خاتون جو لاعلمی میں 30 سال سے 13کروڑ روپے ہاتھ میں لے کر گھوم رہی تھی

وہ خاتون جو لاعلمی میں 30 سال سے 13کروڑ روپے ہاتھ میں لے کر گھوم رہی تھی
وہ خاتون جو لاعلمی میں 30 سال سے 13کروڑ روپے ہاتھ میں لے کر گھوم رہی تھی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون نے 30سال قبل شیشے کے نگینے والی ایک انگوٹھی خریدی اور اب جا کر وہ اسے فروخت کرنے گئی تو جیولر نے ایسا انکشاف کر دیا کہ خاتون کی خوشی کی انتہاءنہ رہی۔ دی سن کے مطابق ڈیبرا گوڈرڈ نامی اس خاتون نے یہ انگوٹھی ایک سیل سے محض 10پاﺅنڈ (تقریباً 1800روپے) میں خریدی تھی۔ کچھ عرصہ تک وہ اسے پہنتی رہی اور پھر اسے زیورات کے ڈبے میں رکھ دیا جہاں یہ گزشتہ 20سال سے پڑی تھی۔

گزشتہ دنوں ڈیبرا کی ماں ایک آن لائن فراڈ کا شکار ہوئی اور تمام جمع پونجی سے ہاتھ دھو بیٹھی۔ ڈیبرا نے اس کی مدد کرنے کا سوچا اور یہ انگوٹھی اٹھا کر فروخت کرنے کے لیے جیولر کے پاس پہنچ گئی۔ جیولر نے انگوٹھی دیکھی تو اس نے حیرت سے ڈیبرا کو دیکھا اور پوچھا کہ ”تمہیں نہیں معلوم کہ یہ کیا ہے؟“ڈیبرا کے نفی میں سر ہلانے پر جیولر نے بتایا کہ یہ اصلی ہیرا ہے اور اس کی قیمت اس وقت 7لاکھ 40ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 13کروڑ 38لاکھ روپے)ہے۔

55سالہ ڈیبرا کا کہنا تھا کہ ”جیولر کے منہ سے یہ بات سنتے ہی میں اچھل کر اپنی کرسی سے کھڑی ہو گئی۔ مجھے یقین ہی نہیں آ رہا تھا کہ اتنے عرصے سے میں کروڑوں روپے کی انگوٹھی ہاتھ میں پہنے پھرتی تھی اور مجھے اس کی اصل مالیت کا اندازہ ہی نہیں تھا۔ میں جیولر سے یہ انگوٹھی واپس لے کر گھر آ گئی اور رات بھر بیٹھ کر اسے دیکھتی رہی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ