ریس لگاتی ہوئی بسوں کا حادثہ

ریس لگاتی ہوئی بسوں کا حادثہ

مری کے علاقے سالگراں میں دو بسیں کھائی میں گر گئیں جس کے نتیجے میں 15 افراد جاں بحق ہوگئے، دونوں بسیں مری سے آرہی تھیں اور اطلاعات کے مطابق ڈرائیوروں نے آپس میں ریس لگا رکھی تھی،.... پہاڑی علاقے میں بل کھاتی ہوئی سڑکوں پر اس طرح ڈرائیونگ کرنا کہ ریس لگا دی جائے بہت ہی خطرناک حرکت ہے۔ جب یہ حادثہ ہوا اس وقت برف باری کی وجہ سے ویسے بھی سڑک پر پھسلن تھی ایسے میں ڈرائیوروں کو محتاط ڈرائیونگ کرنی چاہیے تھی لیکن معلوم نہیں کس ترنگ میں اُنہوں نے خطرناک موڑوں والی اس سڑک پر ریس لگائی اور یوں متعدد قیمتی جانوں کے ضیاع کا باعث ہے، یہ امر بہت ہی افسوس ناک ہے کہ ڈرائیور حضرات گاڑی چلاتے وقت بس میں بیٹھے ہوئے مسافروں کا خیال نہیں رکھتے اور دوسرے ڈرائیوروں کے ساتھ ریس لگانا شروع کردیتے ہیں۔ اگرچہ اس واقعہ کی تحقیقات کا حکم دیدیا گیا ہے لیکن جو قیمتی جانیں ضائع ہوئیں اب وہ تو واپس نہیں آسکتیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ پبلک گاڑیوں کی ڈرائیونگ کرنے والے ڈرائیوروں کو لائسنس جاری کرنے سے پہلے چند ہفتوں کا ایک ایسا کورس کرایا جائے جس میں انہیں باور کرایا جائے کہ جب وہ گاڑی چلارہے ہوتے ہیں تو اُن پر صرف اپنی ہی نہیں دوسرے پچاس ساٹھ لوگوں کی زندگی بچانے کی ذمہ داری بھی عائد ہوتی ہے اس لئے وہ محتاط ڈرائیونگ کریں اور غصے میں آکر دوسرے ڈرائیوروں کے ساتھ ریس لگاکر کسی بھی طرح انسانی جانوں کو خطرے میں ڈالنے کا باعث نہ بنیں۔

مزید : اداریہ


loading...