آن لائن موضع جات میں شجرہ کی تیاری کا کام تا حال پٹواریوں کے پاس ، سائل خوار

آن لائن موضع جات میں شجرہ کی تیاری کا کام تا حال پٹواریوں کے پاس ، سائل خوار

 لاہور(اپنے نمائندے سے )مانیٹرنگ کی غیر فعال پریکٹس اور انتظامی معاملات میں غفلت کے باعث آن لائن موضع جات میں وراثت کے حصول کے لیے شجرہ نسب کی تیاری پٹواریوں کے سپرد کر دی گئی عوا م پٹوارخانوں اور کمپیوٹر سروس سنٹرز کے درمیان فٹبال بن کر رہ گئے عوامی مفاد عامہ کے لیے رائج کردہ پالیسیاں بھی دھری کی دھری رہ گئیں رشوت کے بغیر وراثت کا شجرہ نسب مکمل ہونا ناممکن ہو کر رہ گیا سینئر ممبر اور پی ڈی پنجاب سے نوٹس لینے کی اپیل کی گئی ہے روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق پروجیکٹ مینجمنٹ یونٹ انتظامیہ کے زیر نگرانی اور ڈسٹرکٹ کلکٹر صاحبان کے زیر کنٹرول کمپیوٹر سروس سنٹرز میں آن لائن کیے جانے والے موضع جات میں وراثت کے حقوق منتقل کیے جانے اور وارثان کے نام کمپیوٹرائزڈ سسٹم میں فیڈ کرنے کے لیے شجرہ نسب کی تیاری تاحال مینول طریقے سے کی جا رہی ہے اور شجرہ نسب کی تیاری آج بھی پٹواریوں کے سپرد ہے کمپیوٹر سروس سنٹر میں آنے والے سائلین وراثت کے لیے تحریری درخواست گزارتے ہیں بعد میں چالان فیس بھرنے کے بعد شہریوں کو پٹواریوں سے شجرہ نسب کی تیاری کا حکم دیا جاتا ہے ذرائع نے مزید آگاہی دی ہے کہ شجرہ نسب مکمل کرنے کیے اے ڈی ایل آر ریونیو سٹاف کے پاس بھجواتے ہیں ان کی واپسی ایک ماہ سے قبل نہیں ہوتی اسطرح جو شجرہ نسب کی تیاری کے لیے شہری براہ راست ریونیو سٹاف کے پاس جاتے ہیں تو ریونیو سٹاف کی جانب سے نافذ کردہ منہ مانگی رشوت دینے کے بعدقانونی عمل مکمل کیا جاتا ہے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے شہری محمد عاصم،نوید خان،شہزاد علی اور محمد اشفاق نے آگاہی دی کہ جب جدید تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے تمام کام ٹیکنالوجی اور کمپیوٹرائزڈ سسٹم کے ذریعے کیا جا رہا ہے تو وراثت کے اندراج کے لیے کیوں ریونیو سٹاف کے پاس بھیجا جا رہا ہے اس عمل سے تو عوام الناس کو ڈبل خواری کا سامنا ہے شہریوں کا مزید کہنا تھا کہ پروجیکٹ مینجمنٹ یونٹ انتظامیہ اور دیگر انتظامی افسران کو واضح طور پر عوام الناس کو آگاہی دینی چاہیے کہ آن لائن سسٹم میں وراثت کے لیے کیا طریقہ کار ہیں انتظامات کے اندراج کے لیے کیا پریکٹس ہے اور فرد برائے ملکیت کے لئے کیا سسٹم اپنایا گیا ہے شہریوں کو اس حوالے سے کوئی آگاہی نہ ہونے کے باعث شدید مشکلات کا سامنا ہے شہریوں نے سینئر ممبر بورڈ آف پنجاب ندیم اشرف،پروجیکٹ ڈائریکٹر پنجاب عرفان الٰہی اور ڈسٹرکٹ کلکٹر لاہور کیپٹن عثمان نے نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1