موجود حالات میں فوجی عدالتوں کا قیام ناگزیر ہے،محمد جمیل

موجود حالات میں فوجی عدالتوں کا قیام ناگزیر ہے،محمد جمیل

لاہور(پ ر) جمہوری اتحاد کے مرکزی صدر محمد جمیل نے کہا ہے کہ ایل ایف او پر سابق ڈکٹیٹر جنرل(ر) مشرف کی حمایت کرنیوالی دینی جماعتیں 21 ویں آئینی ترمیم پر حکومت کی مخالفت کررہی ہیں جو دوہرا معیار ہے،دینی جماعتوں کی جانب سے فوجی عدالتوں کے قیام کی مخالفت انکا جمہوری حق ہے مگران جماعتوں کو ایل ایف او کی حمایت پر سابق فوجی آمر کا ساتھ دینے پر قوم سے معافی بھی مانگنی چاہیے، سفاکانہ دہشتگردی اور تخریب کاری کے پے در پے واقعات پاکستان کی سا لمیت او ر یکجہتی کو نقصان پہنچانے کی گہری سازش ہیں ۔جبکہ فرقہ وارانہ قتل وغارت کا سلسلہ بھی تھمنے کا نام نہیں لے رہا،موجود ہ عدالتی نظام دہشتگردوں اور ملکی سا لمیت کیخلاف کام کرنیوالوں کو سزادینے میں ناکام ہوچکا ہے ،ان حالت میں ملٹری کورٹس کا قیام ہی واحد آپشن ہے

 دہشت گردی کیخلاف جنگ نہ جیتی گئی توملک کا اللہ ہی حافظ ہوگا،انہوں نے کہا مولانا فضل الرحمٰن آرمی ایکٹ میں تبدیلی اور 21ویں آئینی ترمیم کو جمہوریت پرخود کش حملہ قرار دے رہے ہیں ، اصولی طور پر انہیں آئینی ترمیم کے بل کی منظوری کے فوراً بعد ہی حکومت سے علیحدگی کا اعلان کردینا چاہئیے تھا مگروہ حکومت میں رہتے ہوئے فوجی عدالتوں کے قیام کی مخالفت کررہے ہیں جو دوہرا معیار ہے،محمد جمیل نے مزید کہا دینی جماعتوں کو ملٹری کورٹس کے قیام سے متعلق اپنے تحفظات ظاہرکرنے سے پہلے دہشت گردوں کو سزا دینے کا متبادل طریقہ کاربھی پیش کرنا چاہیئے تھا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4