”بل منظور کرو،میں ویٹوکروں گا“،اوبامہ کا کانگریس کو چیلنج

”بل منظور کرو،میں ویٹوکروں گا“،اوبامہ کا کانگریس کو چیلنج

واشنگٹن (اظہر زمان،بیوروچیف)6جنوری کو نئی کانگریس کے کام شروع ہو تے ہی اس کا صدر اوبامہ کے ساتھ محاذ کھل گیا‘اویان نمائندگان کے پہلے ہفتے کے اختتام کپر جمعہ کے دن تک وائٹ ہاﺅس کی طرف سے ویٹو کر نے کی تین دھمکیاں دی جا چکی ہیں ۔یہ بل ابھی منظور نہیں ہوئے ۔ری پلیکن پارٹی کے سپیکر جان بو ہنر نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ابھی یہ بل پیش ہوئے ہیں اور ان پر بحث جاری ہے صدر نے بل منظور ہونے کا انتظار کر نے سے قبل ہی ویٹو کی تین دھمکیاں جاری کردی ہیں‘سپیکر کا کہنا ہے کہ صد ر کی دھمکیوں کے باعث کیٹل بل کا ماحول زہر یلا ہو چکا ہے ‘سینٹ میں منگل کے روز ” کی سٹون پائپ لائن “ کا بل پیش کیا گیا جسے ویٹو کر نے کی پہلی دھمکی وائٹ ہاﺅس سے جاری ہوئی ۔اس کے بعد جمعرات کے روز ” اوبامہ کیئر “ کے پروگرام کے بارے میں ایک ترمیم اویان میں پیش ہوئی جس کے مطابق ایک ترمیم ایوان میں پیش ہو ئی جس کے مطابق ایک ہفتے کے کام کی تعریب کو 30گھنٹے کی بجائے 40گھٹنے کرنے کی تجویز پیش ہوئی اس ویٹو کر نے کی دوسری دھمکی جاری ہوئی آئندہ ہفتے صدر اوبامہ کی امیگریشن اصلاحات کو ختم کر نے کیلئے ایوان میں پیش ہونے والے بلوں پر بحث کے بعد منظور ی کا امکان ہے جو وائٹ ہاﺅس کیلئے زیادہ حساس معاملہ ہے صدر اوبامہ نے نومبر میں اپنے انتخابی وعدے کے مطابق تقریباً چالیس لاکھ غیر قانونی افراد کو قانونی حیثیت دینے اور انہیں عام معافی دینے کیلئے انتظامی ایکشن لیا ہے آئندہ ہفتے دو ایسے بل ان میں زیر بحث آئیں گے جو اس ایکشن کی عملاً تنسیخ کا بن سکتے ہیں صدر اوبامہ نے ان بلوں کو بھی ویٹو کر نے کا اعلان کردیا تھا ۔

مزید : صفحہ اول