محکمہ صحت کا کریک ڈاؤن ،ایک جعلی بلڈبنک اور 2لیبارٹریرزسیل

محکمہ صحت کا کریک ڈاؤن ،ایک جعلی بلڈبنک اور 2لیبارٹریرزسیل

لاہور(جاوید اقبال)محکمہ صحت نے شہر میں بغیر رجسٹرڈ بلڈ بنکوں اور جعلی کلینیکل لیبارٹریوں کیخلاف کارروائی کا آغاز کر دیا ہے ۔جس کے تحت محکمہ صحت لاہور کے سربراہ ای ڈی او ہیلتھ،سیکرٹری ڈسٹرکٹ کوالٹی بورڈ اظہر جمال سلیمی اور دیگر ڈرگ انسپکٹروں نے جناح ہسپتال کے قریب چھاپے مار کر میگا بلڈ بنک ،میگا ٹیسٹ لیب اورچغتائی لاہور لیب سیل کر دی ۔چھاپے کے دوران مذکورہ کلینیکل لیب اور بلڈ بنک کے مالکان رجسٹریشن پیش نہ کر سکے جبکہ لیبارٹریوں کو نان کوالیفائڈغیر رجسٹر لوگ چلا رہے تھے ۔بتایا گیا ہے کہ محکمہ صحت نے بلڈ بنکوں اور کلینیکل لیبارٹریوں کو رجسٹریشن کرانے کیلئے دی گئی ڈیڈ لائن گزرتے ہی چھاپوں کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے۔پہلے روز ای ڈی او ہیلتھ ڈاکٹر ذوالفقار علی چوہدری نے دیگر افسروں کے ہمراہ مختلف کلینیکل لیبارٹریوں اور بلڈ بنکوں پر چھاپوں کا آغاز کر دیا ہے۔اس دوران جناح ہسپتال کے سامنے واقع چغتائی لاہور لیب پر چھاپہ مارا گیا تو دوران معائنہ پتہ چلا کہ لیبارٹری کو نان کوالیفائیڈ لوگ چلا رہے تھے جس پر لیبارٹری کو سیل کر دیا گیا۔بعد ازاں میگا ٹیسٹ لیب اور بلڈ بنک پر چھاپے مارے تو یہ بھی رجسٹریشن پیش نہ کر سکے ان کو بھی سیل کر دیا گیا ۔اس حوالے سے ڈرگ کنٹرولر لاہور اظہر جمال سلیمی سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ غیر رجسٹر بلڈ بنکوں اور لیبارٹریوں کیخلاف کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے اور چھاپوں کا سلسلہ جاری رکھا جائے گااور دو ماہ کے دوران تمام جعلسازوں کیخلاف کارروائی مکمل کر لی جائے گی۔

مزید : صفحہ آخر