کراچی میں آپریشن کے باوجود طالبان کے ٹھکانے موجود ہیں، الطاف حسین

کراچی میں آپریشن کے باوجود طالبان کے ٹھکانے موجود ہیں، الطاف حسین

لندن/کراچی(اے این این)متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہا ہے کہ کراچی میں آپریشن کے باوجود طالبان کے ٹھکانے موجود ہیں، اورنگی ٹاؤن میں قتل ہونے والے کارکن ندیم احمد کو کالعدم تنظیم کی جانب سے قتل کی دھمکیاں مل رہی تھیں ، ندیم ایم کیو ایم کے جلسے میں دھماکے کا گواہ تھا۔ اپنے ایک بیان میں اورنگی ٹاؤن میں ایم کیو ایم کے کارکن ندیم احمد کے قتل پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے الطاف حسین نے کہا کہ ندیم احمد کو کالعدم تنظیم کے دہشت گردوں کی جانب سے دھمکیاں مل رہی تھیں کیونکہ ندیم احمد عائشہ منزل پر ایم کیو ایم کے جلسے میں ہونے والے دھماکے کا گواہ تھا اور اس نے عدالت میں دہشت گردوں کو شناخت کیا تھا ۔انہوں نے کہا کہ کارکنوں کو شہید کر کے ایم کیو ایم کو طالبانائزیشن کے خلاف آواز اٹھانے کی سزا دی جا رہی ہے ۔ ایم کیو ایم کے قائد نے ندیم احمد کے قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ریاستی رٹ کو چیلنج کرنے والے کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں آپریشن کے باوجود طالبان کے ٹھکانے موجود ہیں اگر کراچی سے قتل و غارت گری اور دہشتگردی کو ختم کرنا ہے تو طالبان کے ٹھکانے ختم کرنا ہوں گے ۔

مزید : صفحہ آخر