بات بات پر پریشان ہونے والے اپنی اس عادت سے پریشان نہ ہوں، سائنس نے خوشخبری سنادی

بات بات پر پریشان ہونے والے اپنی اس عادت سے پریشان نہ ہوں، سائنس نے خوشخبری ...
بات بات پر پریشان ہونے والے اپنی اس عادت سے پریشان نہ ہوں، سائنس نے خوشخبری سنادی

  

اوٹاوا (نیوز ڈیسک) اگر آپ ہر وقت پریشان ہوتے رہتے ہیں تو یہ کوئی پریشانی کی بات نہیں کیونکہ ایک تازہ سائنسی تحقیق کے مطابق بات بات پر پریشان ہونے والے اور تفکرات میں مبتلاءرہنے والے لوگ زیادہ ذہین ہوتے ہیں۔

 کینیڈا کی لیک ہیڈ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے 125 طلباءپر تحقیق کی جس میں ڈپریشن، پریشانی اور فکر مند رہنے کی عادات و کیفیات کے ذہانت کے ساتھ تعلق کا مطالعہ کیا گیا۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ جو لوگ اکثر پریشان رہتے ہیں یا ماضی کی باتوں کے متعلق سوچتے رہتے ہیں وہ عام طور پر فیصلہ سازی سے پہلے خاصی سوچ بچار کرتے ہیں اور ان کی پریشانی اور تفکر زندگی کے فیصلوں اور کاموں کو درست طور پر سرانجام دینے کی غیر معمولی کوشش کی وجہ سے ہوتی ہے۔

موسمی طوفان نے گھر میں طلاق کروادی

 تحقیق میں طلباءکے ٹیسٹ کئے گئے تو معلوم ہوا کہ ڈپریشن اورپریشانی کے شکار لوگوں کا ذخیرہ الفاظ بہتر ہوتا ہے اور وہ روزمرہ گفتگو کو سمجھنے اور زبان کے استعمال میں بہتر صلاحیت کے مالک ہوتے ہیں۔ اگرچہ ان لوگوں کی زبان اور الفاظ کے متعلق ذہانت زیادہ ہوتی ہے لیکن مشاہدات، مسائل کے حل اور ریاضیاتی مسائل کی سمجھ بوجھ میں وہ لوگ آتے ہوتے ہیں جو زیادہ پریشانی کا شکار نہیں ہوتے اور فوری فیصلہ سازی کرتے ہیں۔ یہ تحقیق سائنسی جریدے "Personality and Individual Differences" میں شائع کی گئی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس