موبائل فون سے دوری بھی صحت کیلئے انتہائی خطرناک، جدید تحقیق کے نتائج نے سب کو حیران کردیا

موبائل فون سے دوری بھی صحت کیلئے انتہائی خطرناک، جدید تحقیق کے نتائج نے سب کو ...
موبائل فون سے دوری بھی صحت کیلئے انتہائی خطرناک، جدید تحقیق کے نتائج نے سب کو حیران کردیا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) موبائل فون کا استعمال اب ہماری زندگی کا لازمی حصہ بن چکا ہے اور اکثر یہ نصیحت سننے میں آتی ہے کہ اس کے استعمال میں اعتدال سے کام لینا چاہیے، مگر ایک تازہ تحقیق میں ایک نیا مسئلہ سامنے آگیا ہے جس کے مطابق موبائل فون سے زیادہ دوری بھی خطرناک ہے۔

امریکا کی یونیورسٹی آف میسوری کے سائنسدانوں نے معلوم کیا ہے کہ آج کے دور میں موبائل فون کا استعمال ہماری شخصیت کالازمی حصہ بن گیا ہے اور اسے خود سے دور رکھنے پر شخصیت میں شدید کمی جیسے احساسات پیدا ہوتے ہیں جو ہماری کارکردگی اور صحت کو متاثر کرسکتے ہیں۔ تحقیق میں معلوم ہوا کہ جب موبائل فون ہمارے پاس نہیں ہوتا تو ہم کام پر توجہ برقرار نہیں رکھ پاتے اور ہماری سوچنے سمجھنے کی صلاحیت بھی متاثر ہوتی ہے۔ فون سے دوری پر ذہنی پریشانی، دباﺅ، دل کی دھڑکن کی رفتار اوربلڈ پریشر میں اضافہ ہوجاتا ہے اور خصوصاً جب فون کی گھنٹی بج رہی ہو اور ہم مصروفیت یا کسی اہم میٹنگ کی وجہ سے اسے سن نہ پائیں تو مذکورہ بالا اثرات شدید ترین ہوجاتے ہیں۔

وہ آدمی جس نے کبوتروں کو بھی توہم پرست بنا دیا

 ماہرین نے اس تحقیق کے نتیجہ میں یہ تجویز کردیا ہے کہ اہم کاموں اور توجہ طلب مسائل کو حل کرتے وقت بہتر یہی ہے کہ موبائل فون کو پاس ہی رکھیں کیونکہ اس کی دوری آپ کو توجہ سے کام نہیں کرنے دے گی۔ یہ تحقیق سائنسی جریدے "Journal of Computer-Mediated Communication" میں شائع کی گئی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس